بھارت میں لڑکے کی لکڑی کے مجسمے سے شادی

اتر پردیش میں لڑکے نے لکڑی کے مجسمے سے شادی کرتے ہوئے ہندو رسم و رواج کے مطابق پھیرے لیے اور تمام تر رسم و رواج بھی ادا کیے
لکڑی کے مجسمے سے شادی کرنے والے نوجوان کا کہنا تھا کہ انہوں نے ایسا اپنے والد کی خواہش پر کیا۔

دولہے کے والد جن کی عمر 90 برس کی ہے، ان کا کہنا تھا کہ میرے کُل 9 بیٹے ہیں جن میں 8 بیٹوں کی شادیاں ہو چکی ہیں جب کہ یہ میرا نواں بیٹا ہے۔

نوجوان کے 90 سالہ والد نے بتایا کہ میرا بیٹا کماتا نہیں ہے اور نہ ہی اس کے پاس دماغ ہے، یہی وجہ ہے کہ میں نے اس کی شادی ایک لڑکی سے کرنے کے بجائے لکڑی کے مجسمے سے کر دی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ میں اپنی زندگی میں تمام بیٹوں کو شادی شدہ اور خوش دیکھنا چاہتا تھا، تبھی میں نے اس کی شادی ایک لکڑی کے مجسمے سے کرا دی