سنتھیا کیخلاف مقدمہ درج کرنے سے دوبارہ معذرت

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی پولیس کی جانب سےامریکی شہری سنتھیا رچی کے خلاف مقدمہ درج کرنے سے ایک دفعہ پھر معذرت کر لی گئی۔

اسلام آباد کی عدالت میں امریکی شہری سنتھیا رچی کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست پر ایڈیشنل سیشن جج عبدالغفور کاکڑ نے سماعت کی۔

دورانِ سماعت پولیس کی جانب سے امریکی شہری سنتھیا رچی کے خلاف مقدمہ درج کرنے سے ایک دفعہ پھر معذرت کی گئی۔

اسلام آباد کے تھانے بنی گالہ کی پولیس نے ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں رپورٹ جمع کرا دی جس میں کہا گیا ہے کہ ایف آئی اے سائبر کرائم کا کیس بنتا ہے، ہم مقدمہ درج نہیں کر سکتے۔

پولیس کا تحریری جواب میں کہنا ہے کہ سنتھیا ڈی رچی امریکی شہری ہیں جنہوں نے بذریعہ ٹوئٹ کمنٹس تحریر کیے
تحریری جواب میں پولیس نے کہا ہے کہ انٹرنیٹ کے ذریعے کمنٹس تحریر کیے گئے ہیں،جبکہ تھانہ بنی گالہ کا علاقہ نہیں بنتا۔

بنی گالہ پولیس کا تحریری جواب میں یہ بھی کہنا ہے کہ سنتھیا رچی کے خلاف کارروائی مقصود ہے تو بذریعہ سائبر کرائم ونگ ایف آئی اے سے رجوع کیا جائے۔

دوسری جانب سنتھیا ڈی رچی نے اپنا وکیل تبدیل کر لیا ہے، جس کے بعد انہوں نے اپنے نئے وکیل سے قانونی مشاورت بھی کی ہے۔

امریکی خاتون سنتھیا رچی نے اسلام آباد کے ایڈیشنل سیشن جج کی جانب سے مقدمہ درج کرنے کے حکم کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔

سنتھیا رچی کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی درخواست پر سماعت 22 جون کو ہو گی

Courtesy Jang News