وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت امن و امان سے متعلق اجلاس

اجلاس میں آئی جی سندھ، اسسٹنٹ کمشنر داخلہ ، ایڈیشنل آئی جی کراچی، ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی، ایڈیشنل آئی جی اسپیشل برانچ، رینجرز اور حساس اداروں کے اعلیٰ حکام شریک

وزیراعلیٰ سندھ نے اجلاس میں گھوٹکی اور لاڑکانہ کے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا

رینجرز جوانوں کے قاتلوں کو فوری گرفتار کرنے کی ہدایات

اس وقت حکومت کورونا وائرس کے خلاف کام میں مصروف ہے تو امن و امان بگڑنا نہیں چاہیے، وزیراعلیٰ سندھ

پولیس، رینجرز اور دیگر اداروں کو امن و امان سے متعلق چوکنا رہنے کی ہدایات

صوبے بھر میں پولیس، رینجرز اور حساس اداروں کو مزید بہتر ہم آہنگی کے ساتھ کام کرنے کی ہدایات

پلاننگ، آپریشن اور انٹیلی جنس کے کام کو سخت اور تیز کرنے کا فیصلہ

صوبے کے تمام اضلاع مین امن و امان سے متعلق سخت اقدامات اٹھانے کا فیصلہ

عوام کی جان اور مال کی حفاظت حکومت کی ذمہ داری ہے، وزیراعلیٰ سندھ

کسی شہری یا کسی اہلکار کا کوئی بال بھی بھیکا نہیں کر سکتا، وزیراعلیٰ سندھ

امن و امان خراب کرنے والوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا فیصلہ

وزیراعلیٰ سندھ کا گھوٹکی اور لاڑکانہ واقعات کی تحقیقات کا حکم

مجھے صوبے کے امن و امان سے متعلق کل شام تک رپورٹ ملی چاہیے، وزیراعلیٰ سندھ

ضلعی پولیس شہروں میں گشت کو بڑھائے اور عوام کی ہر لحاظ سے مدد کرے، وزیراعلیٰ سندھ