9 آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کے پاس اسٹاک موجودتھا مگر جان بوجھ کر سپلائی روکی گئی

وزیراعظم عمران خان کو پٹرول بحران پر رپورٹ پیش کر دی گئی ہے۔ وزیراعظم نے پٹرول بحران میں ملوث کمپنیوں اور ذمہ داران کے خلاف کارروائی کی ہدایت کردی۔

کمپنیوں کے لائسنس منسوخ یا معطل ‘ ملوث افراد کو گرفتار اور ذخیرہ شدہ پٹرول مارکیٹ میں سپلائی کرنے کا حکم دے دیا۔

ذرائع کے مطابق ملک میں پٹرول کا بحران مصنوعی قرار‘ وزیراعظم عمران خان کو رپورٹ پیش کر دی گئی جس میں بحران کے ذمہ داروں کا تعین بھی کر دیا گیا۔

اوگرا نے پیٹرول بحران کی ذمہ دار پیٹرولیم ڈویژن پر عائد کر دی، رپورٹ کے مطابق 9 آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کے پاس اسٹاک موجودتھا مگر جان بوجھ کر سپلائی روکی گئی ‘ ڈی جی آئل ڈ اکٹر شفیع آفریدی اورپٹرولیم

ڈویڑن افسران اپنی ذمہ داری پوری کرنے میں ناکام رہے
jang-report