ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی پریس کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں

کوئٹہ: آج سے پورے سو دن قبل بلوچستان میں پہلا کورونا کا  کیس رپورٹ ہوا تھا۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: کوئٹہ میں سندھ سے تعلق رکھنے والے بچے میں کورونا کیسز کی تصدیق ہوئی تھی ۔جمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: بلوچستان حکومت نے 22 فوری کو تفتان میں کورنٹان اسٹیبلش کیا تھا ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: بلوچستان حکومت نے سے پہلے کورنٹاج بنائیں ۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: کورٹائن میں کھانے پینے کی سہلولت دی گئیترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: آج بلوچستان میں پانج لیبارٹری  اسٹیبلش  کیئے ہیں۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: جب کورونا سے ہمارے لوگ متاثر ہورہے تھے ان کیلئے فوری طور ہر 4100 بیٹ مختص کیئے گئےترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: پلازمہ تھراپی کا آغا بھی کیا گیا جو دیگر صوبوں میں پراویٹ سطح پر کیا جارہے ہیں۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: 802 ڈاکٹرز 2635 پرامیڈیکس اس تمام آپریشن میں خدمت سرانجام دے رہی ہیں۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: کورونا کے تمام انتظامات پر اب تک بلوچستان حکومت نے 6 ارب روپے مختص کیئے۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: ڈاکٹرز سمیت تمام طبعی عملے کیلئے الاونئس کا اعلان بھی کیا گیا۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: اب تک تمام ٹیسٹ کے 22% کے ٹیسٹ مثبت آئیں ہیں۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: کوئٹہ: لوکل منتقل کے کیسز کی شرح92%ہے ۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: 287 ڈاکٹر کورونا سے متاثر ہوئے جبکہ 5 شہید ہوئیں۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: پانچ نرسز بھی کورونا سے متاثر ہوئے جو صحتیاب ہوگئے۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ: بلوچستان اور سندھ حکومت نے  سے پہلے لاک ڈاون کا فیصلہ کیا۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ:  بلوچستان حکومت نے 18 اپریل کو ماسک کو لازمی قرار دیا ۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی