عدالت نے سنتھیا رچی کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دے دیا

اسلام آباد کی عدالت نے سنتھیا رچی کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دے دیا ہے، ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج جہانگیر اعوان نے ہفتے کو دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا تھا جو آج سنایا گیا۔

پی پی رہنما شکیل عباسی نے ایف آئی اے کے مقدمہ درج نہ کرنے پر عدالت سے رجوع کیا تھا۔

عدالت نے ایف آئی اے کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب کیا تھا، فاضل جج نے ایف آئی اے کی درخواست مسترد کر کے مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا، پی پی رہنما نے بے نظیر شہید پر الزام لگانے پر مقدمے کی درخواست کی تھی، جب کہ ایف آئی اے نے عدالت سے اندراج مقدمہ کی درخواست خارج کرنے کی استدعا کی تھی۔
ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج جہانگیراعوان نے ہفتے کو فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا تھا، جسے آج سنایا گیا۔

واضح رہے کہ پاکستان میں مقیم امریکی شہری سنتھیا ڈی رچی نے سابق وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک، سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی اور پی پی رہنما مخدوم شہاب الدین پر سنگین الزامات عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ رحمان ملک نے 2011 میں ان سے اس وقت زیادتی کی جب وہ وزیر داخلہ تھے۔

سنتھیا رچی نے الزام عائد کیا تھا کہ سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے ایوان صدر میں ان سے دست درازی کی جب کہ سابق وزیر صحت مخدوم شہباب الدین پر بھی بدسلوکی کا الزام عائد کیا گیا۔

Courtesy Ary news