عدلیہ پرائیویٹ ھسپتالوں، لیبارٹریوں اور ادویہ ساز اداروں کی کرونآ ٹیسٹ اور علاج کے حوالے سے لوٹ مار سے عوام کو بچائے، چار ھزار روپے میں ھونے والے ٹیسٹ کے آٹھ سے نو ھزار روپے اور علاج اور دوائیوں کے من مانے دام وصول کئے جا رھے ھیں

عدلیہ پرائیویٹ ھسپتالوں، لیبارٹریوں اور ادویہ ساز اداروں کی کرونآ ٹیسٹ اور علاج کے حوالے سے لوٹ مار سے عوام کو بچائے، چار ھزار روپے میں ھونے والے ٹیسٹ کے آٹھ سے نو ھزار روپے اور علاج اور دوائیوں کے من مانے دام وصول کئے جا رھے ھیں۔

شوکت خانم، چغتائی لیب، آغا خان لیباریٹریز مصیبت کی اس گھڑی میں بھی لوگوں کی جیبوں پر بھاری ھاتھ صاف کر رھی ھیں۔

حکومتی ھسپتالوں میں علاج کی عدم سہولیات اور پرائیویٹ ھسپتالوں، ادویہ ساز اداروں اور نجی لیبارٹریوں کی ملی بھگت نے کرونآ کا علاج نہ صرف غریبوں بلکہ مڈل کلاس کے لئے بھی ناممکن بنا دیا ھے۔

حکومتی طبی اداروں کی کارکردگی نامکمل اعداد و شمار اور جھوٹے بیانات تک محدود ھے، ایسے میں عدلیہ سُومو ٹو لیکر عوام کو اس لوٹ کھسوٹ اور غیر انسانی طرز عمل سے بچائے۔

اس پیغام کو زیادہ سے زیادہ شئیر کریں تاکہ ارباب اختیار تک انتہائی ضروری آواز بن کر پہنچ سکے۔

منجانب:
پاکستانی عوام