جدہ کی ڈائری۔-پاکستانیوں کی وطن روانگی کا سلسلہ جاری ہے، پاکستانی مشکور

جدہ کی ڈائری۔
پاکستانیوں کی وطن روانگی کا سلسلہ جاری ہے، پاکستانی مشکور


کروناء وباء کی وجہ سے ہوائی سفر ایک مشکل سفر ہوگیا ہے ، مہنگا بھی ہوگیا ہے ، حکومت پاکستان دنیا بھر میں موجود سمندر پار پاکستانیوں کے مطالبے پر انکے لئے فلائیٹ کا بندوبست بھی کررہی ہے ، پاکستان جانے کی خواہش رکھنے والوں میں خلیجی ممالک سے پاکستانیوں کی ایک بڑی تعداد وطن عزیز جانے کی خواہش ہے چھوٹے کاروبار کا خاتمہ ، بڑے اداروں میں بھی مالی مشکلات ہونے کی بناء پر تنخواہوں میں مشکلات پیدا ہورہی ہیں، نیز وہ لوگ جو بیمار ہیں، جو کروناء وائرس سے قبل اور فضائی پابندیاں لگنے سے قبل یہاں موجود وزٹ ویزہ پر اور عمرہ ویزوں پر بھی ایک بڑی تعداد موجود تھی جنہیں اب فلائٹس پرپاکستان روآنہ کیاجارہا ہے سفارت خانہ اور قونصلیٹ کا اپنی تمام تر کوششوں اور مہیا وسائل کے ساتھ پاکستانیوں کی خدمت پرمامور ہے ،

مگر اسکے باوجود سوشل میڈیا پر کچھ نامعلوم افراد اپنی بے وقفیوں کی بناء پر غیر سنجیدہ قسم کے پروپگنڈے پرمامور ہے، جو ایک شرم انگیز بات ہے سفارت کار نہ جانے کسی زعم میں لوگوں کو اعتماد میں لینے کے بجائے media management کرنے کو اپنا فرض سمجھتے ہیں ، مگر کچھ افسران نام و نمود کے خواہش کے بغیر بھی پاکستانیوں کی ہر ممکن مدد کرتے ہیں حالیہ کروناء وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن اور کاروبار میں مندی کی بناء پر یہاں بے شمار افراد بشمول پاکستانیوں کے غذاء کی کمی ہوئی ، یہاں موجود سفارت کاروں کی درخواست پر صاحب حیثیت پاکستانیوں نے بھر پور امداد مہیا کی۔ قونصل ویلفئیر جدہ ماجد میمن، قونصل پریس ارشد منیر، قونصل کمرشیل وحید شاہ ، منسٹر ابو نصرشجاع اور دیگر افسران کو جدہ میں سرگرم پایا ، یہ معلومات مجھے ان پاکستانیوں سے حاصل ہوئیں جنکی مدد کی گئی وہ لوگ اپنے افسران کی بے لوث خدمت کے شکر گزار تھے، گزشتہ دنوں جدہ کے ہوائی اڈے پر بھی پاکستان جانے والی پرواز پر جانے والے پاکستانیوں کی اللہ الوداع کرنے قونصل ویلفئیر ماجد میمن، قونصل پریس ارشد منیر، قونصل کمر شیل وحید شاہ جدہ کے ہوائی اڈے پر موجود تھے تاکہ کسی پاکستانی کو کوئی مشکل نہ ہو، جدہ میں پاکستان کے قونصل جنرل خالد مجید، اور ریاض میں سفیر پاکستان راجہ علی اعجاز بھی ریاض میں ہوائی اڈے پر پاکستانیوں کو الوداع کہتے ر ہے ہیں۔۔ قونصل ویلفیئر ماجد میمن اور ڈائریکٹر حج ساجد مسعود اسجدی مسافروں کو الوداع کہنے کے لئے جدہ کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر موجود تھے۔کورونا کے پھیلنے کی وجہ سے معمول کی بین الاقوامی پرواز یں کے معطل ہونے کے بعد، یہ جدہ سے پاکستان جانے والی پی آئی اے کی نویں خصوصی پرواز تھی۔ اب تک مجموعی طور پر 1،950 پاکستانیوں کو ان نو خصوصی پروازوں کے ذریعے جدہ ریجن سے وطن واپس پہنچایا گیا ہے۔ ریاض سے بھی پی آئی اے کی خصوصی پروازیں چلائی جارہی ہیں۔
مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی نور الحسن تنویر کی مختلف ممالک کے مسلم لیگی ساتھیوں سے آن لائن ملاقات

تحریک انصاف کی حکومت ملک کی کسی بھی مشکل پر قابو پانے کیلئے نااہل ہے، یہ بات پاکستان مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی چوہدری نورالحسن تنویر نے ایک آن لائن کانفرنس میں سعودی عرب، امریکہ ، کینڈا، ناروے، لندن میں مسلم لیگی عہدیداروں سے بات کرتے ہوئے کہی، نور الحسن تنویر نے کہا کہ تحریک انصاف اور اسکے وزیر اعظم نے سمندر پار پاکستانیوں کی مدد کا راگ الاپا مگر اسوقت سمندر پار پاکستانی جس حال میں ہیں وہ بات پوشیدہ نہیں۔ انہوں نے کہا ملک کے اندر اور باہر پاکستانیوں کو اس حکومت نے مشکلات کا شکار کررکھا ہے ، جھوٹ او ر جھوٹ کو اپنا شیوہ بنایا ہوا ہے، انہیں پتہ ہے کہ حکومت انہیں کسی عوامی خدمت کے صلے میں نہیں ملی بلکہ انکے نام قرعہ نکالا اور مانگے تانگے کے لوگوں کو لیکر حکومت بنا لی ، اب انہیں یہ بھی پتہ ہے اگر عوام پریشان ہیں تو ہوا کریں انہیں کونسا آئندہ انتخاب میں عوام کے پاس ووٹ کیلئے جانا ہے۔ نور الحسن تنویر نے کہا کہ موجودہ نے صرف حزب اختلاف کے خلاف پروپگنڈہ کرنے، میڈیا ٹرائل کرنے کیلئے مشیروں کی فوج ظفر موج رکھی ہوئی ہے، جو خزانے پر بوجھ ہے۔ حکومتی اراکین کے اندر حکومتی اراکین کی کرپشن کے قصے زبان ذدہ عام ہیں۔ نواز شریف جو عوام کی دعاوں کے نتیجے میں صحت یاب ہورہے ہیں انکی تصاویر دیکھ کر اور انکی صحت یابی کا سوچ کر نیند اڑ جاتی ہے۔ اور پروپگنڈہ کرنے چینلز پر بیٹھ جاتے ہیں انکی یہ تمام کوشیشیں بے کار ہیں ۔عوام گواہ ہیں کہ ہو کیا رہا ہے، نیب جھوٹے مقدمے بناتی ہے ، مشیران شور مچانا چانا شروع کردیتے ہیں کہ اب فلان جیل جائیگا۔ جبکہ عدالت کوئی ثبوت نہ ہونے کی بناء پر بری کردیتی ہے، یہاں تک کہ گزشتہ دنوں رانا ثناء اللہ پر ہیروین کا مقدمہ بنا کر جیل بھیجا گیا، وزیر موصوف قران کو گواہ بناکر کہتے رہے کہ مجھے اللہ کو جان دینا ہے ، ہیروئین ملی تھی ، آخر کار اس جھوٹے مقدمے میں بھی انہیں شرمندگی نہیں ہوئی اور رانا ثناء باعزت بری ہوگئے، خاقان عباسی کو بغیر کسی مقدمے کے گرفتار رکھا گیا ، آ ج تک کوئی الزام کسی مسلم لیگی پر ثابت نہ ہوسکا، دوسری جانب چینی، آٹا، بجلی کی کرپشن پر اربوں روپے کمانیوالے جہانگیر ترین ملک سے فرار ہوگئے وہاں کوئی نیب یا مقدمہ درمیان میں نہیں آیا۔ تنویر الحسن نے مسلم لیگی عہدیداروں سے کہا ہے وہ وقت دور نہیں کہ موجودہ حکومت سے چھٹکارہ ملے گا چونکہ جنہوں ن پشت پناہی کی وہ بھی ان سے نالاں ہوچکے ہیں انکی نالائقیوں کی وجہ سے۔ رکن قومی اسمبلی چوہدری نورالحسن تنویر نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی سرکار بری طرح ناکام ہوچکی ہے حکومتی اتحادی جماعتوں کو چاہئیے کہ وہ حکومتی نااہلی کا حصہ نہ بنیں، چوہدری نور تنویر پاکستان مسلم لیگ انٹرنیشنل کے جنرل سیکریٹر ی بھی ان سے بات کرنے کیلئے کینڈا، نیوزی لینڈ، لندن، اور دنیا کے کئی شہروں سے مسلم لیگی کارکنان بھی آن لائن موجود تھے سیاسی بات چیت کے علاوہ آن لائن بات چیت میں مسلم لیگ کی تنظیم کا بھی ذکر ہوا، اور انہوں نے ہدائت کی کہ جو دوست کسی وجہ سے ناراض ہیں ان سے رابطہ کرکے انہیں واپس مسلم لیگ میں لایا جائے ، چوہدری تنویر الحسن دوبئی جانے سے قبل ریاض میں رہائش پذیر تھے اسلئے ریاض شہر کے تمام مسلم لیگیوں نے ساتھ گزرے ہوئے لحمات کا بھی ذکر کیا اور اس سے بات کرکے بہت خوشی محسوس کی۔ رکن پارلیمنٹ چوہدری نورالحسن تنویر نے کہا کہ پی ٹی آئی موجودہ سرکار ناتجربہ کار اور نااہل ہے تبدیلی کے نام پر آنے والی پی ٹی آئی نے ملک میں بے روزگاری اور نئے قرضے لینے جیسے دیگر کئی ریکارڈ قائم کیے ہیں مگر اب وقت آگیا ہے کہ حکومتی اتحادی جماعتیں مزید حکومت کا ساتھ نا دیں تاکہ اس حکومت کو چلتا کیا جاے آن لائن تقریب سے پاکستان مسلم لیگ ن ریاض ریجن کے صدر خالد اکرم رانا نے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے بیرون ممالک پاکستانی مشکلات اور پریشان حال ہیں مگر حکومت کی جانب سے خاطر خواہ اقدامات نہیں اٹھائے جا رہے تاہم سعودی عرب میں تمام اپوزیشن جماعتیں ملکر ہم وطنوں کی داد رسی کر رہی ہیں تقریب سے زاہد لطیف سندھو، قاضی اسحاق میمن،محمد اصغر قریشی سمیت دیگر افراد جن میں یوسف جٹ، حفیظ محمودارشد، احسان دانش، ڈاکٹر منصور میمن، احمد حسن رانجھا، رضوان راجا، راجہ یعقوب، رانا اشرف، اجمل منہاس، عباس بیگ، احمد حسن رانجھا، سردار شعیب، محمد ریاض راٹھور،ناصر محمود، عباس ملک، تصدق گیلانی نے بھی سوالات جوابات میں حصہ لیا، ریاض اور جدہ کے کمیونٹی میں معروف ڈاکٹر منصور میمن نے چوہدری تنویر سے سوال کیا بلکہ مشورہ دیا کہ تمام سیاسی جماعتیں ملکر حکومت کو ہٹانے کی جدوجہد کیوں نہیں کرتیں۔
ameer -mohammad-khan-jedda