راہنما ایسے ہوتے ہیں!

جیسنڈا آرڈرن دنیا کی واحد وزیراعظم ہیں جنہوں نے اپنی اور اپنے وزیروں کی تنخواہیں کرونا میں کم کر دیں تھیں اور وہ پیسے کرونا کی مد میں جمع کروائے تھے ۔ یہ ہوتے ہیں عظیم راہنما ۔۔ ان کی بروقت حکمت عملی سے ان کا ملک نیوزی لیند کل سے کورونا فری ہے۔

جس وزیراعظم کی قوم کے 100 بےگناہ افراد مرے ہوئے جہاز میں مر جاتے ہیں اور وہ خود نتھیا گلی میں مری بند کروا کے اپنی فیملی کے ساتھ عید مناتا ہو ۔۔ جس کی عوام میں کورونا سے روزانہ کے حساب سے 100 افراد مر رہے ہوں اور وہ کہہ رہا ہو ابھی کم لوگ مر رہے ہیں ۔۔جہاں غربت نے پیر جما لئے ہوں اور وہ کہہ رہا آنے والے دن اور بھی مشکل ہونگے ۔۔۔

ایسے وزیراعظم راہنما نہیں ہوتے بلکہ ڈمی ہوتے ہیں ۔۔۔ ان کے پاس مشکلات کا حل نہیں ہوتا ۔۔۔ وہ اپنی کیبنیٹ میں وزیر مشیر کا اضافہ کر کے ملک کو مزید غریب کرتے ہیں لیکن حل نہیں دیتے ۔

پاکستانی عوام کی بدقسمتی ہے جس کے لئے انہیں جلد یا بدیر گھروں سے نکلنا ہوگا ۔ اور جتنی دیر سے نکلیں گے اتنی ہی تکلیف زیادہ سہنی ہوگی۔

(والسلام :- فرح ناز راجہ)