ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے مستقبل کا فیصلہ آئندہ ماہ ہوگا، آئی سی سی

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے اعلان کیا ہے کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ پر حتمی فیصلے سے قبل مزید ایک ماہ انتظار کیا جائے گا جس کے دوران حالات اور مختلف پہلو زیر غور لائے جائیں گے جبکہ رازداری کے معاملات میں خلاف ورزی پر تحقیقات میں تمام بورڈ ممبران اور آئی سی سی مینجمنٹ کو شامل کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔

آئی سی سی بورڈ اجلاس وڈیو کانفرنس کے ذریعے ہوا جس میں ورلڈ ٹی ٹوئنٹی سمیت متعدد معاملات پر غور کیا گیا۔

اس سال آسٹریلیا میں ہونیوالے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی اور آئندہ برس نیوزی لینڈ میں ہونیوالے آئی سی سی ویمن ورلڈ کپ پر بورڈ ممبران نے مزید ایک ماہ صورتحال کو مانیٹر کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

آئی سی سی ترجمان کے مطابق فی الحال ایونٹ کے شیڈول کے مطابق انعقاد کو تصور کرتے ہوئےکام جاری رکھا جائے گا جبکہ ایک ماہ کے دوران مختلف متبادل پلانز پر بھی غور ہوگا۔

اجلاس میں آئی سی سی کے معاملات میں رازداری کی خلاف ورزی کے تنازع پر بھی بات ہوئی، اس تنازع کی وجہ سے 28 مئی کو ہونے والا اجلاس بھی موخر کردیا گیا تھا، اب معاملے کی انکوائری کے دائرہ کار کو بڑھاتے ہوئے اس میں بورڈ ممبران اور آئی سی سی مینجمنٹ کو بھی شامل کرلیا گیا ہے جس کے بعد ایتھیکس آفیسر ہر بورڈ کے سربراہ سے پوچھ گچھ کرسکتا ہے۔

دوسری جانب آئی سی سی نے ٹیکس معاملات کے حل کے لیے بھارتی کرکٹ بورڈ کو اس سال دسمبر تک کی مہلت دے دی ہے۔