پاکستان کا نیوزی لینڈ سے موازنہ نہ کریں : ہارون شاہد

پاکستان شوبز انڈسٹری کے معروف گلوکار و اداکار ہارون شاہد کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز کورونا فری ہونے والے ملک نیوزی لینڈ سے پاکستان کا موازنہ نہ کیا جائے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اداکار نے اپنے سلسلہ وار ٹوئٹس کئےجس میں انہوں نے عمران خان کے کورونا سے نمٹنے کے اقدامات پر تنقید کرنے والوں کو نشانہ بنایا
اپنے ٹوئٹ میں ہارون نے نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کے خطاب کے کچھ الفاظ تحریر کئے۔

انہوں نے لکھا کہ ’حکومت عوام کی حفاظت کیلئے ہر ممکن کوشش کرے گی، آپ بھی اپنی اور دوسروں کی حفاظت کیلئے حکومت کا ساتھ دیں، کسی ایک کی بھی غلطی دوسروں کی جان لینے کا سبب بن سکتی ہے۔
ہارون شاہد نے لکھا کہ یہ وزیراعظم عمران خان کے نہیں بلکہ نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کے الفاظ ہیں۔

انہوں نے لکھا کہ یہی بات پہلے دن سے عمران خان بھی بیان کرتے آرہے ہیں، لیکن لوگوں کی نفرت نے یہ سب فراموش کر کے صرف اس جانب توجہ مرکوز کرلی کہ انہوں نے کورونا کو عام فلو کہا ہے۔

ہارون شاہد نے لکھا کہ میری ذاتی رائے بھی یہی ہے کیونکہ کورونا وبا کے آغاز میں دنیا بھر میں اسے عام فلو ہی قرار دیا گیا تھا۔
اپنے ایک اور ٹوئٹ میں اداکار نے لوگوں سے پاکستان کا نیوزی لینڈ سے موازنہ کرنے سے بھی منع کیا اور وجہ یہ پیش کی کہ ہر ملک کی کسی مسئلے سے نمٹنے کی صلاحیت دوسرے ملک سے مختلف ہوتی ہے۔

انہوں نے لکھا کہ براہِ کرم عالمگیر وبا کی صورتحال میں کسی بھی ملک کا کسی دوسرے ملک سے موازنہ کرنا درست نہیں۔

اس سے قبل گلوکار علی ظفر نے نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کی تعریف کرتے ہوئے کہا تھا کہ دنیا بھر کو ایسے رہنماؤں کی ضرورت ہے