بھارت میں بیک وقت 25 سرکاری اسکولوں سے تنخواہ لینے والی ٹیچر گرفتار

بھارت میں بیک وقت 25 سرکاری اسکولوں سے تنخواہ لینے والی ٹیچر گرفتار۔ خاتون نے جعل سازی کر کے 13 ماہ کے دوران تقریباََ 1 کروڑ بطور تنخواہ کما لیے۔ تفصیلات کے مطابق بھارت میں 25 سرکاری اسکولوں سے بیک وقت تنخواہ وصول کرنے والی اسکول ٹیچر کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔


بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اترپردیش میں پرائمری تعلیم کے شعبے میں مبینہ طور پر جعل سازی کا ایک معاملہ سامنے آیا ہے جس کے تحت انامیکا شکلا نامی ایک استانی کو کاس گنج میں گرفتار کر لیا گیا۔

انامیکا شکلا کو محکمہ پرائمری تعلیم نے نوٹس بھیجا تھا لیکن وہ اس نوٹس کا جواب دینے کی بجائے استعفیٰ دینے کے لیے گئیں جہاں انہیں ڈرامائی انداز میں گرفتار کرلیا گیا۔ پولیس کے مطابق بیسک ایجوکیشن آفیسر کاس گنج کی درخواست پر مقدمہ


درج کر کے انامیکا شکالا کو گرفتار کیا گیا ہے۔ خاتون مسلسل 13 ماہ تک بیک وقت 25 سرکاری اسکولوں سے تنخواہیں بٹورتی رہی۔ بھارت میڈیا کی رپورٹس کے مطابق خاتون نے جعلی سازی کے تحت 13 ماہ کے دوران 1 کروڑ روپے کمائے۔