سنتھیا رچی دو مختلف پاسپورٹس پر 52 دفعہ پاکستان آئیں،

پاکستان میں مقیم امریکی شہری سینتھیا رچی کے پاسپورٹ کی نقل اور پاکستان آنے کا سفری ریکارڈ جیو نیوز نے حاصل کرلیا۔

سرکاری ذرائع کے مطابق سنتھیا رچی دو مختلف پاسپورٹس پر 52 دفعہ پاکستان آئیں، سنتھیا رچی کا آخری پاسپورٹ 18 جولائی 2018 کو امریکی حکام نے جاری کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے: رحمٰن ملک نے ویزے کا مسئلہ حل کرنے کا کہہ کر بلوایا، سینتھیا رچی

ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکی خاتون سنتھیا رچی کا اس سے پہلے والا پاسپورٹ 9 دسمبر 2008 کو جاری ہوا تھا۔

سنتھیا رچی پاکستان پہلی بار 9 نومبر 2009 کو آئیں تھیں اور صرف 3 دن قیام کے بعد 12 نومبر کو کراچی ہی سے واپس روانہ ہوگئی تھیں۔

واضح رہے کہ ایک ویڈیو بیان میں سنتھیا رچی نے پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر داخلہ رحمٰن ملک پر زیادتی کرنے کا الزام لگا دیا ہے۔

امریکی خاتون سنتھیا رچی نے الزام لگایا کہ رحمٰن ملک نے انہیں 2011ء میں زیادتی کا نشانہ بنایا جب پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت تھی اور رحمٰن ملک وزیرِ داخلہ کے عہدے پر فائز تھے۔

یہ بھی پڑھیے: سعید غنی نے سنتھیا رچی کے الزامات کو سوچا سمجھا منصوبہ قرار دے دیا

امریکی شہری نے سابق وزيرِ اعظم یوسف رضا گیلانی اور سابق وزیرِ صحت مخدوم شہاب الدین پر بھی دست درازی کا الزام عائد کیا ہے۔

سنتھیا رچی نے کہا ہے کہ یوسف رضا گیلانی نے ان سے تب دست درازی کی جب وہ ایوانِ صدر میں مقیم تھے۔

سابق وزیرِ اعظم یوسف رضاگیلانی ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ امریکی خاتون کے خلاف قانونی کارروائی کے لیے پارٹی فیصلہ کرے گی۔

پیپلز پارٹی نے امریکی خاتون کے خلاف عدالت میں درخواست جمع کرادی ہے جس کے جواب میں جسٹس آف پیس میں خاتون کو 9 جون کو طلب کرلیا گیا ہے۔

سینیٹر رحمان ملک نے بھی امریکی خاتون کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے انہیں بے ہودہ قرار دیا ہے