کیا یہ بیر بوٹیاں کسی نے دیکھی ہیں؟بچپن میں جب برسات کے موسم میں بارش کے بعدکچی زمین سے ایکدم سے یہ مخملی خوبصورت کیڑے نمودار ہوتے تھے جو برسات کو اور خوبصورت بنا دیتے تھے اب تو نہ وہ زمین رہ گئ اور نہ وہ قدرتی مناظر۔۔ایسا لگتا ہے ہر چیز مصنوعی ہو گئ ہے

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کورونا وائرس سےمتاثرہ مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ، اسپتالوں پر مریضوں کا دباؤ بڑھنے لگا انتہائی نگہداشت کے یونٹس میں مریضوں کی تعداد میں اضافہ، سندھ بھر میں کورونا سےمتاثرہ مریضوں اور ہسپتالوں کی صورتحال پر ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضی وہاب نے اعدادوشمار کے ساتھ صورتحال پیش کردی بیرسٹر مرتضی وہاب نے اپنے ویڈیو بیان میں کہا کہ
سندھ بھر میں کورونا کےشکار198مریض آئی سی یو میں داخل ہیں جبکہ 55 مریض وینٹیلیٹرز پر ہیں انہوں نے کہا کہ یہ اعدادوشمار پانچ جون تک کے ہیں انہوں نے بتایا کہ کورونا وائرس کےشکار مریض طبیعت خراب ہونے پر ایچ ڈی یوز میں زیر علاج ہیں۔149 مریضوں کو ایچ ڈی یوز میں منتقل کیا گیا ہے ان مریضوں کو سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ ہسپتالوں ،وینٹی لیٹرز اور آئی سی یوز میں آنیوالے مریضوں کی تعداد تیزی سےبڑھ رہی ہے۔2ہفتے قبل تمام سرگرمیوں کو کھولنے سے مریضوں کی تعداد میں بے انتہا اضافہ ہورہاہے۔ بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ خطرناک وباء کے اعداوشمار عوام کے ساتھ شییئر کرنے کا مقصد ڈرانا یا خوف دلانا نہیں بلکہ ان میں احساس زمہ داری پیدا کرنا ہے تاکہ ہم خود سمیت پورے ملک کو اس وباء سے بچا سکیں انہوں نے کہا کہ جو لوگ کاروبار اور ٹرانسپورٹ کھولنے اور وہ شہری جو گھروں سے آزادانہ باہر گھومنے کی باتیں کررہے ہیں وہ یہ ضرور جان لیں کہ کاروبار کھولنے اور لاک ڈاؤن میں نرمی سے کس تیزی سے کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اس مرض کا شکار کوئی بھی ہوسکتا ہے ہمیں ہر صورت احتیاط برتنا ہوگی انہوں نے کہا کہ جو لوگ حکومت سے کورونا کے مشکل ترین حالات میں رعایت کی توقع کررہے ہیں انکی زمہ داری بھی بنتی ہے کہ وہ حکومتی ایس او پیز پر سختی سے عمل بھی کریں، شہری ماسک کا استعمال، پانچ فُٹ تک کا فیزیکل فاصلہ اور بار بار ہاتھ منہ دھوئیں۔ بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ ہم حکومت کا ساتھ دینگے تو یقین جانئیے اس وباء سے بچ سکیں گے ورنہ صورتحال بہت خراب ہوتی جارہی ہے اللہ پاک ہم سب پر اپنا فضل اور رحم کرے ہمیں اس وباء سے جلد چھٹکارا دلائے۔ آمین