صوبائی سیکرٹری نے سرکاری گاڑی بیگم کو تحفے میں دے دی

حکومت سندھ کے ایک صوبائی سیکرٹری نے سرکاری گاڑی اپنی بیگم کو تحفے میں دے دی۔ ۔تفصیلات کے مطابق صوبائی محکمہ برائے انسانی حقوق کے سابق سیکرٹری سے تبادلہ ہونے پر سرکاری گاڑیاں واپس مانگی گئی۔۔۔۔۔یہ بات سامنے آئی کے صوبائی سیکرٹری نے اپنے دور میں ایک سرکاری گاڑی اپنی بیگم کو تحفے میں دے دی تھی مذکورہ سرکاری گاڑی کو رجسٹرڈ کرائے بغیر اپلائیڈ فار رجسٹریشن کر کے چلایا جاتا رہا ۔ سیکرٹری نے کرولا کار کو اپنے استعمال میں رکھیں اور سوزوکی کار اپنی بیگم کو تحفے میں دے دی ۔بیگم کے زیر استعمال گاڑی اب تک حکومت کو واپس نہیں کی گئی۔ دوسری جانب یہ بات بھی سامنے آئی ہے کی لیاری ایکسپریس وے بحالی کے پروجیکٹ کے ایک سابق پروجیکٹ ڈائریکٹر اپنے ساتھ کرولا گاڑی بھی لے گئے اور تبادلہ ہونے کے باوجود گاڑی واپس نہیں کر رہے ۔مزکورہ سابق پروجیکٹ ڈائریکٹر سمیت ایسے کئی افسران ہیں جنہوں نے مختلف عہدوں پر فائز ہوتے ہوئے سرکاری گاڑیاں اپنے گھر پر کھڑی کردی اور تبادلے کے بعد وہ گاڑیاں حکومت کو واپس نہیں کر رہے۔ جبکہ ایسے افسران کی بھی کوئی کمی نہیں ہے جن کے پاس ایک سے زائد گاڑیاں موجود ہیں ان کے گھر پر چار چار پانچ پانچ گاڑیاں کھڑی ہیں ان کے لئے سرکاری ڈرائیور اور سرکاری پٹرول بھی استعمال کیا جا رہا ہے اس صورتحال سے چیف سیکرٹری سمیت صوبائی محکموں کے انتظامی افسران پوری طرح آگاہ ہیں لیکن ان سے پوچھنے والا کوئی نہیں عوام کے سرکاری فنڈز پر ڈاکہ ڈالا جا رہا ہے مال مفت دل بے رحم جیسی صورت حال ہے۔ گاڑیوں کی دیکھ بھال و مرمت پر فنڈ الگ خرچ کیے جا رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں