سندھ کے ہر محکمے کو کرپشن اور اقربا پروری نے تباہ و برباد کر کے رکھ دیا ہے۔ سندھ حکومت میں کوئی بھی محکمہ چلانے کی صلاحیت موجود نہیں۔ طاہر ملک

سندھ کے ہر محکمے کو کرپشن اور اقربا پروری نے تباہ و برباد کر کے رکھ دیا ہے۔ سندھ حکومت میں کوئی بھی محکمہ چلانے کی صلاحیت موجود نہیں۔ طاہر ملک

سندھ فوڈاتھارٹی کی نا اہلی کی وجہ سے شہر کے ریسٹورنٹس اور دیگر مقامات پر غیر معیار ی اشیاء کی فروخت پر کسی قسم کی پابندی عائد نہیں کی جا سکی۔طاہرملک

شہر کے مختلف مقامات پر ریسٹورنٹس اوربیکریزپر عوام کو اشیاء کے ساتھ ساتھ کورونا وائرس اور دیگر بیماریاں دی جارہی ہیں۔طاہر ملک

کراچی، 05جون: پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما طاہر ملک نے کہا ہے کہ سندھ فوڈاتھارٹی کی نا اہلی کی وجہ سے شہر کے ریسٹورنٹس اور دیگر مقامات پر غیر معیار ی اشیاء کی فروخت پر کسی قسم کی پابندی عائد نہیں کی جا سکی۔موجودہ حالات میں جہاں احتیاطی تدابیر پر عمل کروانا صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے وہیں عوام کو مضر صحت اشیاء سے بچانے کے لئے حکومت سندھ اور سندھ فوڈ اتھارٹی کو بھی اپنے فرائض سرانجام دینے ہوں گے۔ طاہر ملک نے مزید کہا کہ شہر کے مختلف مقامات پر ریسٹورنٹس اوربیکریزپر عوام کو اشیاء کے ساتھ ساتھ کورونا وائرس اور دیگر بیماریاں دی جارہی ہیں۔ سندھ فوڈ اتھارٹی کی جانب سے ٹیمیں ریسٹورنٹس میں کھانوں کے معیار کا جائزہ نہیں لیتی۔سندھ فوڈ اتھارٹی میں کرپشن عروج پر ہے۔ اگر کسی ریسٹورنٹ کو غیر معیاری اور مضر صحت کھانا فروخت کرنے پر سیل کیا جاتا ہے تو اسے سندھ فوڈ اتھارٹی کے کرپٹ افسران بھاری رشوت وصول کر کے دوبارہ ریسٹورنٹ کھولنے کی اجازت دے دیتے ہیں۔ ماضی میں بھی مضر صحت کھانا کھانے سے کئی افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں لیکن سندھ فوڈ اتھارٹی کرپشن اور ریسٹورنٹس سے بھتہ لینے میں مصروف ہے۔ سندھ میں کوئی بھی محکمہ درست طریقے سے اپنے فرائض سرانجام نہیں دے رہا۔سندھ کے ہر محکمے کو کرپشن اور اقربا پروری نے تباہ و برباد کر کے رکھ دیا ہے۔ سندھ حکومت میں کوئی بھی محکمہ چلانے کی صلاحیت موجود نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ فوڈ اتھارٹی کے ملازمین گھوسٹ ملازمین ہیں جو گھروں پر بیٹھ کر تنخواہیں وصول کررہے ہیں۔ سندھ حکومت سندھ فوڈ اتھارٹی کو فعال بنائے اور شہر کے تمام ریسٹورنٹس میں فوڈ اسٹینڈرڈ کے مطابق کھانے پینے کی اشیاء کی فروخت کو یقینی بنایا جائے۔

جاری کردہ
میڈیاسیل پی ٹی آئی سندھ