یہ امریکی مسلم نوجوان محمود ابو میالہ ہیں امریکہ بھر میں نسل پرستی کے خلاف ہونے والے پرتشدد مظاہروں کی وجہ بننے والا واقعہ ان کے ہاں

یہ امریکی مسلم نوجوان محمود ابو میالہ ہیں امریکہ بھر میں نسل پرستی کے خلاف ہونے والے پرتشدد مظاہروں کی وجہ بننے والا واقعہ ان کے ہاں سے ہی شروع ہوا تھا۔بزنس مین

محمود ابو میالہہ ریاست منی سوٹا کے شہر منیاپلس میں Cup Foods کے نام سے فاسٹ فوڈ اسٹور چلاتے ہیں. پولیس اہلکاروں کی حراست میں ہلاک ہونے والے46 سالہ افریقی امریکی جارج فلائیڈ نے مسٹر محمود کے سٹور میں ہی 20 ڈالر کا جعلی نوٹ چلانے کی کوشش کی تھی. محمود میالہہ بتاتے ہیں کہ انکے اسٹور کے کلرک نے ریاستی پالیسی کے تحت پولیس کو اطلاع کردی. جس کے بعد چار پولیس افسروں نے جارج فلائیڈ کو حراست لیا . مسٹر محمود کا کہنا ہے کہ انکے وہم و گمان میں بھی نہ تھا کہ انکے اسٹور کی جانب سے جعلی نوٹ کی شکایت اس قدر تباہ کن اور افسوسناک ہوگی.ان کے بقول وہ پولیس کے بہیمانہ اقدام کی مذمت کرتے ہیں اورآیندہ وہ کبھی جعلی نوٹ کی اطلاع پولیس کو نہیں دیں گے.انھوں نےیہ بھی کہا کہ اگر وہ اسٹور پر موجود ہوتے تو شاید پولیس کو اطلاع نہ کرتے.