بھارت ،حاملہ ہتھنی کی موت پر فنکار برہم

بھارتی ریاست کیرالا میں حاملہ ہتھنی کی موت کے افسوسناک واقعے پر فنکار شدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے انتظامیہ کو موت کا ذمہ دار ٹھہرا رہے ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں بھارت میں ایک حاملہ ہتھنی نے دھوکے سے پٹاخے سے بھرا پھل کھا لیا تھا جس کے پھٹنے سے وہ تڑپ تڑپ کر مر گئی۔

یہ واقعہ جنوبی بھارت کی ریاست کیرالہ میں 23 مئی کو کھیتوں کے قریب پیش آیا تھا۔ اس علاقے کے لوگ اپنی فصلوں کو جنگلی جانوروں سے بچانے کے لیے پھلوں میں پٹاخے بھر کے پھینک دیتے ہیں، تاکہ جانور ان کے پھٹنے سے بھاگ جائیں۔

محکمہ جنگلات کے ایک افسر موہن کرشنن نے 30 مئی کو سوشل میڈیا پر یہ خبر دیتے ہوئے ہتھنی سے جذباتی معذرت طلب کی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہتھنی نے انناس یا کوئی اور ایسا پھل کھانے کی کوشش کی تھی جس میں پٹاخہ بھرا ہوا تھا
بالی ووڈ کے فنکاروں نے ہتھنی کی موت پر شدید افسوس کا اظہار کرتے ہوئے مجرموں کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ انوشکا شرما نے انسٹاگرام پر لکھا کہ وزیراعلیٰ کیرالہ مجرموں کو تلاش کریں اور انہیں اس بھیانک ظلم پر کیفر کردار تک پہنچائیں۔

اداکار اکشے کمار نے اپنے ٹوئٹ میں لکھا کہ انہیں یقین ہے کہ جنگلی جانور انسانوں سے زیادہ انسانیت کا سبق رکھتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ حاملہ ہتھنی کے ساتھ جو افسوسناک واقعہ ہوا وہ ناصرف دل دہلا دینے والا بلکہ ایک غیر انسانی عمل ہے۔

اکشر کمار نے ملزمان کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ بھی کیا۔
اداکارہ شردھا کپور نے اپنے سوشل میڈیا پیغام میں لکھا کہ اس واقعے کی خبر سننے کے بعد سے وہ دل شکستہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایسا عمل کرنے والے مجرموں کو سخت سے سخت سزا دینے کی ضرورت ہے۔

عالیہ بھٹ، ٹائیگر شیروف، اور ورون دھون نے بھی اس بارے میں لکھا اور غیر انسانی سلوک پر غصے اور ہتھنی کی اذیت پر دکھ کا اظہار کیا۔