سلیم ملک نے پی سی بی کے سوالات کو مسترد کردیا

لاہور: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان سلیم ملک نے پی سی بی کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کو مسترد کردیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان سلیم ملک نے پی سی بی کے سوالنامے کا جواب تیار کرلیا، ان کے وکلا کی ٹیم نے ٹرانسکرپٹ جواب تیار کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سلیم ملک نے موقف اختیار کیا ہے کہ آئی سی سی نے پی سی بی کو کوئی ریکارڈنگ بھجوائی ہے تو فراہم کی جائے، بورڈ کے پاس ان کے خلاف کچھ تھا تو عدالت میں پیش کیوں نہیں کیا۔

سلیم ملک کا کہنا ہے کہ جب بھی کوئی بات ہوتی ہے تو بورڈ حکام آئی سی سی کا بہانہ بناتے ہیں
سابق کپتان نے جواب میں موقف اختیار کیا کہ جس اخبار کے الزامات کا ذکر کیا جارہا ہے وہ غلط بیانی پر بند ہوچکا ہے، معاملے کو اب ختم ہونا چاہئے اس بار پیچھے نہیں ہٹوں گا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سلیم ملک کا کہنا تھا کہ کئی کھلاڑیوں کو فکسنگ کی سزا کے بعد کھیلنے یا کوچنگ کا موقع ملا مجھے بھی کوچنگ کا اختیار دیا جائے۔

یاد رہے کہ سلیم ملک پر 2000 میں میچ فکسنگ انکوائری کے بعد تاحیات پابندی لگائی گئی تھی جسے سیشن کورٹ نے آٹھ سال بعد ختم کردیا تھا۔

سابق کرکٹرز انضمام الحق، ثقلین مشتاق اور راشد لطیف نے مطالبہ کیا تھا کہ سلیم ملک کو دوسرا موقع ملنا چاہئے۔