پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما طاہر ملک کا سندھ میں غیر قانونی اور جعلی ڈومیسائل بنانے والے کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ۔ طاہر ملک

اکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما طاہر ملک کا سندھ میں غیر قانونی اور جعلی ڈومیسائل بنانے والے کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ۔ طاہر ملک
tahir malik pti leader
اگر کراچی کے مقامی لوگوں کی حق تلفی جاری رہی تو شہر کے پڑھے لکھے نوجوانوں میں محرومیاں بڑھیں گی۔طاہر ملک

کراچی،یکم جون: پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما طاہر ملک نے سندھ میں غیر قانونی اور جعلی ڈومیسائل بنانے والے کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ 25 ہزار جعلی ڈومیسائل پر سندھ حکومت نے اپنے من پسند افراد کو جو نوکریاں دی گئیں وہ دراصل کراچی کی مقامی پوسٹیں پر ڈاکا ہے جو انہوں نے غیر قانونی طور پر ہتھیا لی ہیں ان کے خلاف فوری کاروائی کی جائے۔کے ایم سی،ے ڈی اے،واٹر بورڈ،کے بی سی اے،ڈسٹرکٹ کونسل اور پولیس کی تمام پوسٹیں سروسز رولز آف پاکستان کے مطابق سو فیصد مقامی پوسٹیں ہیں۔ان سب پر جعلی ڈومیسائل بنا کر قبضہ کر کے کراچی کے مقامی لوگوں کا معاشی قتل کیا گیا ہے،انہیں نہ صرف منسوخ کیا جائے بلکہ ان سارے لوگوں بشمول بنانے والوں کے سب کوسخت سزا دی جائے۔اگر کراچی کے مقامی لوگوں کی حق تلفی جاری رہی تو شہر کے پڑھے لکھے نوجوانوں میں محرومیاں بڑھیں گی۔انہوں نے مزید کہا کہ غیر قانونی ڈومیسائل جس کسی نے بنائے ہیں وہ قانوناً جرم ہے ایسے لوگوں کوسخت سے سخت سزا دی جانی

Tahir Malik=PTI

چاہئے۔آج کراچی کا جوان ہاتھوں میں ڈگریاں لئے دربدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔ سندھ حکومت اور ان کے کرپٹ افسران کی ملی بھگت سے کراچی میں میرٹ کا قتل عام کیا گیا ہے۔ ہم وفاقی حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ نیب اور ایف آئی اے کے ذریعے شفاف انکوائری کروائے تاکہ اس معاملے کی اصل حقیقت عوام کے سامنے آ سکے۔ جب نیب اور ایف آئی اے تحقیقات کریں گی تو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔