1983میں اسمگلنگ کیلئے پاکستان ہاکی ٹیم کا سہارا لیا گیا، حنیف خان

پاکستان ہاکی ٹیم کے سابق کپتان اولمپئن حنیف خان نے 37 سالہ پرانہ پنڈورا باکس کھول دیا، ان کا کہنا ہے کہ 1983میں اسمگلنگ کیلئے پاکستان ہاکی ٹیم کا سہارا لیا گیا۔

سابق اولمپئین و کپتان حنیف خان نے جیو نیوز سے خصوصی گفتگو کے دوران انکشاف کیا ہے کہ میں 1983ء میں ٹیم کا کپتان تھا۔

قومی ہاکی ٹیم ہانگ کانگ سے وطن واپس آرہی تھی تو سامان میں گاڑیوں کے پارٹس، چشموں کے فریم اور وی سی آر شامل تھے۔

اولمپئین حنیف خان نے بتایا ہے کہ ہانگ کانگ ایئر پورٹ پر ہی اسمگلنگ کا سامان پاکستان ہاکی ٹیم کے سامان کے ساتھ روانہ کیا گیا تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایئر پورٹ پر کسٹم حکام نے پاکستان ہاکی ٹیم کو اسمگلنگ کے سامان سے آگاہ کیا تھا، اس وقت اس سامان کی لاگت ایک سے ڈیڑھ کروڑ روپے تھی۔

اولمپئین حنیف خان کا کہنا تھا کہ تحقیقات کے دوران ٹیم کے کچھ آفیشلز ملوث نکلے تھے جبکہ پاکستان کا نام مزید بدنام ہونے سے بچانےکے لیے کیس دبا دیا گیا تھا۔