مرید عباس قتل کیس، مرکزی ملزم عادل زمان ضمانت پر رہا

اینکر مرید عباس قتل کیس کے اہم ملزم عادل زمان کو ضمانت پر رہا کر دیا گیا ہے۔ اس حوالے سے عدالت نے سندھ ہائیکورٹ نے ملزم عادل زمان کی ضمانت کی درخواست منظور کرتے ہوئے اسے

رہا کرنے کا حکم کر دیا ہے۔ اس موقع پر وکیل مدعی کا کہنا تھا کہ عدالت نے ملزم کی درخواست ضمانت پر تفصیلی فیصلہ جاری نہیں کیا، سندھ ہائیکورٹ کا تفصیلی فیصلہ ملنے کے بعد سپریم کورٹ سے رجوع کریں گے۔
یاد رہے کہ 9 جولائی 2019 کو کراچی میں نجی ٹی وی کے اینکر مرید عباس اور خضر حیات نامی شخص کو بزنس پارٹنر عاطف زمان نے قتل کیا تھا جس کے بعد اس نے خود کو بھی گولی مارکر خودکشی کی کوشش کی تھی۔ اس کیس میں مرکزی ملزم عاطف زمان اور اس کا بھائی عادل زمان ہیں۔

مرکزی ملزم عاطف زمان اس سے قبل اہلیہ مرید عباس زارا عباس سے معافی مانگ چکے ہیں۔ جنوری میں ہونے والی سماعت میں عدالت میں ملزم عاطف زمان اور مرید عباس کی بیوی زارا عباس ایک دوسرے سے ملے جس پر عاطف زمان کی جانب سے معافی مانگ لی تھی۔

اس موقع پر عاطف زمان کا کہنا تھا کہ کہ میں مرید عباس کے قتل کی معافی مانگتا ہوں۔ جواب دیتے ہوئے زارا عباس کی جانب سے کہا گیا تھاا کہ میں تو کیا تمہیں تو اللہ بھی معاف نہیں کرے گا۔ تا ہم جنوری میں ہونے والی پیشی میں ملزمان کے وکیل پیش نہیں ہوئے تھے جس کے بعد عدالت کی جانب سے برہمی کا اظہار کیا گیا تھا۔ قتل کے بعد معاملے کی تفصیلات سامنے آئیں تھیں کہ مرید عباس اور ملزم عاطف زمان ایک دوسرے کے ساتھ کاروبار کررہے تھے جس میں ایک دوسرے کی مخالفت اور پیسوں کے لالچ میں آ کر عاطف زمان نے مرید عباس کو قتل کر دیا تھا۔ تا ہم آج سندھ ہائیکورٹ نے اس کیس کے مرکزی ملزم عادل زمان کو ضمانت پر رہا کر دیا ہے۔-urdupoint