ملک میں سب سے زیادہ روزگار صنعتی شعبہ فراہم کرتا ہے ۔مکمل فعال کرنا ضروری ہے

ملک میں سب سےزیادہ روزگار صنعتی شعبہ فراہم کرتا ہے اگر اسے ہیں مکمل طور پر فعال نہیں کیا گیا تو ملک کی آبادی کا بہت بڑا طبقہ اس سے براہ راست متاثر ہو گا ۔


یہ بات کرونگی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری کاٹی کے صدر شیخ عمر رحان نے تمام صنعتوں کو کھولنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہی ان کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے باعث صنعتکار شدید معاشی بدحالی کا شکار ہوچکے ہیں صنعتکاروں نے ایس او پی پر عملدرآمد سے کبھی انکار نہیں کیا اور جب حکومت مخصوص صنعتوں کو ان ایس او پی پر عملدرآمد کی شرط کے ساتھ کام کرنے کی اجازت دے رہی ہے تو دیگر صنعتی بھی اس پر عمل کر سکتی ہیں شیخ عمر ریحان کا کہنا ہے کہ کاروباری سرگرمیاں رفتہ رفتہ بحال ہورہی ہیں اور یہ خوش آئند بات ہے لیکن ملکی معیشت کی بقا کے لئے تمام صنعتوں کو کام کرنے کی اجازت دینا ناگزیر ہے انہوں نے وفاقی اور صوبائی حکومت سے اپیل کی کہ موجودہ معاشی بحران سے نکلنے کے لئے صنعتوں کو مکمل طور پر فعل کرنے کے اقدامات کیے جائیں سرحدوں کی بندش جاری رہی تو ہزاروں چھوٹے بڑے کارخانے اور فیکٹریاں مستقل طور پر بند ہوجائیگی اور بزنس کمیونٹی کے ساتھ ساتھ آبادی کا ایک بہت بڑا حصہ بھی اس طرح براہ راست متاثر ہو گا ان کا کہنا ہے کہ موجودہ معاشی صورتحال میں عیدالفطر پر طویل چھٹیوں کے متحمل نہیں ہوسکتے حکومت اس فیصلے پر بھی نظر ثانی کرے اور اسے تین چھٹیوں تک محدود کرے پہلے ہی معیشت کا بہت نقصان ہو چکا ہے