اسرائیل کیلئے چین کے سفیر کی اپنے گھر سے لاش بر آمد

پولیس نے افسوس ناک واقعہ کی تحقیقات شروع کر دی ہیں تاہم فی الحال کوئی ثبوت نہیں مل سکا۔

دیو وائی کو فروری2020 میں اسرائیل میں تعینات کیا گیا تھا اور اس سے قبل وہ یوکرائن میں فرائض انجام دے چکے تھے۔

چینی سفیر کے بیوی اور بچے ان کے ساتھ اسرائیل منتقل نہیں ہوئے تھے۔ مقامی پولیس نے رائٹرز نیوز ایجنسی کو بتایا کہ واقعہ کی اطلاع ملتے ہیں پولیس جائے وقوعہ پر پہنچ چکی ہے اور ضروری قواعدوضوابط پورے کیے جا رہے ہیں۔

اسرائیل کے چینل12 ٹی وی نیوز کے مطابق چینی سفیر کی سوتے ہوئے قدرتی موت واقع ہوئی ہے لیکن سرکاری بیان فی الحال جاری نہیں کیا گیا۔

اپنی تعیناتی کے بعد چینی سفیر نے کورونا وائرس کے سبب اپنے آپ کو 15 دن کے گھر میں آئسولیٹ کرلیا تھا۔ اپنی موت سے ایک ماہ قبل دیئے گئے انٹرویو میں دیو وائی نے کہا تھا کہ عالمی طاقتیں کورونا کے معاملے میں چین کو قربانی کا بکرا بنانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ بیماریاں پوری انسانیت کی دشمن ہوتی ہیں اور ہمیں مل کر ان کا مقابلہ کرنا چاہیے۔

Courtesy Humnews Urdu