24 گھنٹوں کے دوران صوبے بھر میں 350 سے زائد منافع خوروں پر 5 لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صوبے بھر میں 350 سے زائد منافع خوروں پر 5لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ عائد :  ڈاکٹر کھٹو مل جیون
کراچی: بیورو آف سپلائی اینڈ پرائسیز کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صوبے بھر میں 2ہزار 3 سو 50 سے زائد دوکانوں, پھل و سبزیاں فروش اور دیگر اشیائ فروخت کرنے والوں کو چیک کیا گیا جبکہ 350 سے زائد منافع خوروں پر 5 لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ بھی عائد کیاگیا۔ یہ بات وزیر اعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی برائے بیورو آف سپلائی اینڈ پرائسیز ڈاکٹر کھٹو مل جیون نے اپنے جاری ایک بیان میں کہی. ان کا کہنا تھا کہ صوبے بھر میں ناجائز منافع خوروں اورذخیرہ اندوزوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے اور محکمہ بیورو آف سپلائی اینڈ پرائسیز کے افسران بھی ضلعی انتظامیہ کی معاونت کررہے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ سرکاری نرخ نامے پر مکمل عملدرآمد اور میعاری اشیا کی فروخت کو یقینی بنانے کے لیے ضلعی انتظامیہ کے افسران صوبے بھر میں کاروائیاں کررہے ہیں۔ تفصلات کے مطابق کراچی ڈویژن میں 74 منافع خوروں پر 2 لاکھ 35 ہزار روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کیا گیا۔ جبکہ صوبے کے دیگر اضلاع میں 280 سے زائد منافع خوروں پر 2 لاکھ 65 ہزار روپے سے زائد کا جرمانہ بھی عائد کیا گیا۔