پنجاب میں سندھ کے معیار کا کوئی ادارہ نہیں، کورونا سے نمٹنے کے لئے سیاست کو عارضی طور پر ایک طرف رکھنا ہوگا

کراچی : سندھ حکومت کے ترجمان مشیر قانون ، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی پاکستان کی خدمت کررہی ہے وفاق سے تعصب کی بُو آرہی ہے وزیراعظم تینوں صوبوں کا دورہ کرتے ہیں مگر سندھ کا رُخ نہیں کرتے، سندھ کے طبی اداروں کو تعصب کی عینک اُتار کر دیکھنے کی ضرورت ہے پنجاب میں سندھ کے معیار کا کوئی ادارہ نہیں، کورونا سے نمٹنے کے لئے سیاست کو عارضی طور پر ایک طرف رکھنا ہوگا پی ٹی آئی کی وفاق میں الگ اور سندھ میں کچھ اور ہی پالیسی ہے کورونا کو عام فُلو قرار دینے والے زرا طبی ماہرین کے نقطہ نظر کو سامنے رکھ کر بات کریں سندھ کی وزیر صحت ڈاکٹر عزرا فضل ٹی وی پر نہیں ہوتی بلکہ وہ عملی طور پر فیلڈ میں کام کرتی ہیں اور الحمداللہ انکا کام نظر بھی آرہا ہے صحت کے شعبے میں سندھ نے دیگر صوبوں کے مقابلے میں زیادہ اور معیاری کام کیا ہے وہ منگل کو صوبائی وزیر تیمور تالپور اور معاون خصوصی جاوید نایاب لغاری کے ہمراہ نیوز کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب کا مزید کہنا تھا کہ پی ٹی آئی قیادت نے سندھ حکومت کے خلاف مہم شروع کی ہے سندھ حکومت کی پذیرائی کے بعد مخالفین پریشان ہیں کہتے ہیں 120ارب کابجٹ ہے کہاں گیا کبھی بجٹ کی کتاب پڑہی ہوتی تو یہ لوگ ایسے سوال نہ کرتے بیرسٹر مرتضی ٰوہاب نے کہا کہ سترارب روپے بجٹ نان ڈیولپمنٹ بجٹ ہوتا ہے جوتنخواہوں کے لئے ہوتا ہے باقی پیسے کچھ اتھارٹیز پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ کے تحت خرچ کئے جاتے ہیں انہوں نے کہا کہ دنیا بھرمیں سندھ حکومت کے اقدامات کی تعریف کی جارہی ہے مگر مخالفین ہیں کہ میں نہ مانوں کی پالیسی پر عمل پیرا ہیں بیرسٹر مرتضی ٰوہاب کا کہنا تھا کہ اکانومسٹ نے سندھ حکومت کی پالیسی کوسراہا تھا این آئی سی وی ڈی،گمزمیڈیکل یونیورسٹیز اوردیگرکئی ادارے ہیں جن کوگرانٹ دی جاتی ہے انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز کچھ ڈاکٹرزپربھی الزمات لگائے گئے بجائے ان کی حوصلہ افزائی کے ان پرالزامات لگائے جارہے ہیں۔

الزام لگانے والوں کو شرم آنی چاہئیے انہوں نے بتایا کہ این آئی سی وی ڈی 2011میں سندھ حکومت کوملا صرف سات سوملین بجٹ تھا بہتری کاسفراسٹارٹ ہوا این آئی سی وی ڈی سکھرحیدرآباد ٹنڈومحمد خان اوردیگرشہروں میں اب اس کے سیٹلائیٹ سینٹرہیں یہ مثال صرف سندھ میں ملے گی کے پی میں ایسا کوئی ادارہ نہیں بنایا گیا گمبٹ انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائینس میں کڈنی لیورکورنی دیگرٹرانسپلانٹ ہوتا ہے 196 افراد کے وہاں اب تک کڈنی ٹرانسپلانٹ ہوچکے ہیں ان میں سے 112 افراد سندھ جب کہ باقی پنجاب اوربلوچستان کے مریض تھے کینسرکے لئے جناح میں سائیبرنائیف سروس دی یہ دنیا کی واحد سہولت ہے جو سندھ میں مفت دی جاتی ہے پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ کے تحت سندھ حکومت نصف پیسے دیتی ہے یہاں روزانہ بیس جبکہ اب تک گیارہ ہزارسے زائد مریض صحتیاب ہوچکے ہیں 47فیصد سندھ تیس فیصد پنجاب کے مریض صحتیاب ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک ایسا ادارہ پنجاب یا کے پی میں نہیں ہے یہ صرف تنقید کرنا جانتے ہیں صحت کے شعبے میں انکی خود کی کاردگردگی نہ ہونے کے برابر ہے یہ لوگ تعصب کی عینک اتارنے کو تیارنہیں ہیںایس آئی یوٹی کو سالانہ چھ ارب گرانٹ سندھ حکومت دیتی ہے لاڑکانہ سکھرکاٹھوڑ اوردیگرشہروں میں بھی اب اس کے سینٹرزہیں ساڑھے آٹھ ہزار مریض ڈائیلاسز کرواچکے ہیں سندھ میں ربوٹک سرجری اوربون میروسرجری ہورہی ہے انڈس اسپتال کا قصور کیا ہے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ وزیرخارجہ کہتے ہیں پیپلزپارٹی سے صوبائیت کی بو آتی ہے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ میں اور میراوزیراعلی اور چیئرمین پیپلزپارٹی باربارملکرکام کرنے کا کہتے ہیں کہتے ہیں لیکن یہ کوئی بات ماننے کے لئے تیار نہیں ہیں وزیرخارجہ نے پیپلزپارٹی کو صوبائی پارٹی کہا شاید وہ جانتے نہیں کہ سندھ حکومت کی خدمت اورکاموں سے سب مستفید ہو رہے ہیں پیپلزپارٹی نے اپنے دور اقتدار میں اس ملک میں جو آئین کی مضبوطی کے لئے کام کئے۔

وہ شاید وزیر خارجہ کو یاد نہیں پیپلزپارٹی پاکستان کی خدمت کررہی ہے تعصب کی بووفاق سے آتی ہے وزیراعظم تینوں صوبوں کادورہ کرتے ہیں مگر سندھ نہیں آتے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کراچی ہمارا ہے قریشی صاحب تعصب کی بات نہ کریں وزیرصحت آکربتائیں کہ کیا کیا جارہا ہے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ خرم شیرزمان کے بیان پر اسد عمرنے خود تسلیم کیا کہ ان کا بیان غیرذمہ دارانہ ہےہماری لاک ڈاؤن پالیسی کوبھی سبوتاز کیا گیا اپنے ٹائیگرزکو کنٹرول کرکے ملک کے لئے کام کیاجائے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کراچی کے تین بڑے اسپتالوں کاکنٹرول سنبھالنے کی باتوں میں کوئی صداقت نہیں وہ یاگورنر وفاق کے نمائیندے نہیں اگر لے لئے گئے ہیں توان اداروں کا پھر اللہ ہی حافظ ہے پانچ کھرب کی پروپیگنڈہ بھی بے بنیاد ہے ہم بھی کہہ سکتے ہیں وفاق کھربوں کابجٹ پیش کرتا ہے کہاں گئے پرہمیں پتہ ہے ان کوصوبوں کو دفاع کے لئے اورقرضوں کے لئے بھی پیسے دیتے ہیں بیرسٹر مرتضی ٰوہاب نے کہا کہ سندھ حکومت کے کووڈآرڈیننس میں سے دوشقوں کونکال کر باقی بھیج رہے ہیں انہوں نے کہا کہ وفاق پورے پاکستان کوریلیف دے ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری کی صحت بلکل ٹھیک ہے ہم اس حوالے سے ہر پروپیگنڈے کی تردید کرتے ہیں گورنرکی تبدیلی کا کوئی علم نہیں وفاق نے این ایف سی سے 205ارب کم دیئے کبھی انہوں اس کے لئے وفاق کوخط لکھا ہے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ پیرجوگوٹھ واقعے میں سیمپلنگ میں کوئی غلطی ہوسکتی ہے معیشت کوجتنا نقصان پچھلے بیس ماہ میں وفاق نے دیا ہے کسی نے نہیں دیا تڈی دل کاخاتمہ نہیں ہوسکا ہےسندھ کی طرف سے مالی مدد کے باوجود تڈی دل کاخاتمہ نہیں کیا جاسکا ہے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر تیمور تالپور نے کہا کہ پی ٹی آئی کےخرم شیرزمان وزیراعلی قائم علی شاہ سے زیادہ ملاقاتیں کرتے تھے میں سوچتا تھا شاید ان کے رشتہ دارہوں لیکن پتہ چلا کہ وہ سی ایم ہائوس میں کھانا سپلائی کرتا تھا چاولوں میں کنکرڈالتا تھا اب وہ خود بتائیں کہ کس کوپیسے دیتے تھے یا لیتے تھے انہوں نے کہا کہ شاہ محمود قریشی صاحب عمرکوٹ سے الیکشن ہارنے کے بعد کتنی بار آئے ہیں۔