بچوں میں کوروناسے منسلک پراسرار بیماری کاانکشاف

گزشتہ روز ایک پریس بریفنگ کے دوران امریکی ریاست نیویارک کے گورنراینڈریو کومو کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس سے منسلک ایک پراسرار بیماری سامنے آئی ہے جس کا شکار کم سن بچے ہیں ۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس بیماری کی وجہ سے نیویارک میں تین بچے زندگی کی بازی ہارچکے ہیں اوران تینوں بچوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ یہ کچھ نیا ہے ، اورپھیل رہا ہے ۔اینڈریو کومو نے تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ اس بیماری کی علامات میں زہر پھیلنا، (ٹاکسک شاک) اور رگوں کی سوجن شامل ہیں جس سے دل کو شدید نقصان پہنچتا ہے اوران بچوں کی اموات اسی وجہ سے ہوئیں ۔
کوومو کا کہنا تھا کہ بہت سے بچوں میں سانس کی علامات ظاہر نہیں کی گئیں جو عام طور پر کوویڈ 19 کی ظاہری علامات ہیں اور جب انہیں اسپتال لایا گیا تھا تو ان کا کورونا وائرس یا اس جیسی اینٹی باڈیز کا ٹیسٹ مثبت آیا تھا ۔ہم نے سوچا کہ بچے ٹرانسمیشن کا سبب ہوسکتے ہیں لیکن ہم نے یہ نہیں سوچا تھا کہ بچے اس میں مبتلا ہوں گے ۔ انھوں نے بتایا کہ ریاستی حکام ایسے مزید 73 کیسز کی پڑتال کر رہے ہیں۔
عام طور پر یہ خیال کیا جا رہا تھا کہ بچے کورونا سے متاثر نہیں ہوتے تاہم یہ پیش رفت اس بات کی علامت ہے کہ وبا کا خطرہ نہایت کم عمر افراد میں بھی موجود ہے۔ ماہرین اب بھی یہ سمجھنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ کیا یہ عارضہ کورونا وائرس سے منسلک ہے یا نہیں، کیونکہ اس سے متاثر بچوں میں سے کئی ایسے ہیں جن کا کورونا کا ٹیسٹ منفی آیا ہے۔ اس سے قبل برطانیہ میں بھی کاواساکی بیماری کے کچھ کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں ان میں بھی بچوں میں رگوں کی سوجن جیسی پریشان کن علامات سامنے آئیں جبکہ کچھ بچے جان سے بھی ہاتھ دھو بیٹھے تھے ۔

Courtesy Gnn Urdu