عدالت کی چیئرمین نیب کے اختیارات کے خلاف درخواست پر سماعت سے معذرت

جسٹس شہباز رضوی اور جسٹس اسجد جاوید گھرال نے چوہدری برادران کی چیئرمین نیب کے خلاف درخواست پر سماعت سے معذرت کر لی اور بینچ کے سربراہ جسٹس شہباز رضوی نے نئے بینچ کی تشکیل کے لیے درخواست چیف جسٹس کو بھجوا دی۔

اس سے قبل بنائے گئے دو رکنی بینچ کے رکن جسٹس فاروق حیدر نے بھی بینچ میں بیٹھنے سے انکار کر دیا تھا۔
چوہدری برادران نے موقف اختیار کیا ہے کہ نیب سیاسی انجینئرنگ کرنے والا ادارہ ہے۔نیب کے کردار اور تحقیقات کے غلط انداز پر عدالتیں فیصلے بھی دے چکی ہیں۔

چوہدری برادران نے کہا کہ چیئرمین نیب نے ہمارے کے خلاف 19 سال پرانے معاملے کی دوبارہ تحقیقات کا حکم دیا ہے۔انہیں 19 سال پرانے کیس اور بند کی جانے والی انکوائری دوبارہ کھولنے کا اختیار نہیں۔ انہون نے درخواست میں استدعا کی کہ نیب کا انکوائری دوبارہ کھولنے کا اقدام غیرقانونی قرار دیا جائے

Courtesy ary urdu