سندھ، وزیراعلیٰ ہاؤس میں 5افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق-وزیراعلی ہاؤس کے تمام اسٹاف کا کورونا ٹیسٹ کروانے کا بھی حکم

سندھ کے وزیراعلیٰ ہاؤس میں 5افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد وزیر اعلی ہاؤس میں غیر ضروری افسران اور اسٹاف کے داخلے پر پابندی عائد کردی گئی ہے جبکہ وزیراعلی ہاؤس کے تمام اسٹاف کا کورونا ٹیسٹ کروانے کا بھی حکم دیدیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق وزیراعلی کے معاون خصوصی راشد ربانی کا کورنا مثبت آنے کے بعد عملے کے ٹیسٹ کیے گئے تھے۔

ان میں سے وزیر اعلی ہائوس کے ایک ڈرائیور، ایک ٹیکنیشن، ایک کلرک میں کورنا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ذرائع نے بتایا کہ تمام مثبت آنے والے عملے کو قرنطینہ کردیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ وزیر اعلی ہائوس میں غیر ضروری افسران اور اسٹاف کے داخلے پر پابندی بھی عائد کردی گئی ہے۔ وزیراعلی ہائوس کی صورتحال کے پیش نظر وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے ٹڈی دل سے متعلق اجلاس بھی ویڈیو لنک کے زریعے کیا۔

ذرائع نے بتایاکہ اب وزیراعلی ہائوس کے تمام اسٹاف کا کورونا ٹیسٹ کروانے کا حکم دیا گیا ہے۔ وزیر اعلی ہائوس سے متصل کمشنر ہائوس کی اسٹاف کالونی میں بھی کئی ملازمین کا کورونا ٹیسٹ کیا گیا ہے۔ دوسری جانب وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران سب سے زیادہ 1080 نئے کورونا وائرس کے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں ،خیرپور کے پیر جو گوٹھ میں 246 کیسز مثبت آئے ہیں۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کو کورونا وائرس کے حوالے سے جاری بیان میں کیا ہے ۔ وزیراعلی سندھ نے پیر جو گوٹھ میں لاک ڈائون سخت کرنے کی ہدایت دیدی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ انتہائی تشویش کی بات ہے اور اب عوام کو سمجھنا ہوگا کہ صورتحال کیا بن رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم 5 ہزار 498 ٹیسٹ کئے جس کا 20 فیصد یعنی 1 ہزار 80 کیسز مثبت آئے ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 10 ہزار 771ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہفتہ کو 4 مریض انتقال کرگئے، اس طرح انتقال کرنے والوں کی مجموعی تعداد 180 ہوگئی