خرم شیر زمان کو چاہیے کہ چٹ پٹے چپس کی آوازیں لگائے سیاست اسکے بس کی بات نہیں . تیمور تالپور

خرم شیر زمان کو چاہیے کہ چٹ پٹے چپس کی آوازیں لگائے سیاست اسکے بس کی بات نہیں . تیمور تالپور


بےشک وزیراعلی سندھ کو فیصلہ کرنا ہے کہ صوبے کو کس طرح چلانا ہے نوابزادہ محمد تیمور ٹالپور

وزیراعلی سندھ نے صوبے کی عوام کے مفاد میں بہترین فیصلے کیے جس میں ان کی ٹیم بھی ان کے شانہ بشانہ کھڑی ہے

وزیراعظم اور ان کی ٹیم نے صرف وزیراعلی سندھ کے کاموں میں روڑے اٹھائے صوبے کے فنڈ کو کٹ کیا

صوبے کی عوام سے سوال تو تب کرو کہ وفاق سے کچھ ریلیف سندھ کی عوام کو دلوایا ہو وفاق سے سوال کریں کہ سندھ کی عوام کو کیا ریلیف دیا کرونا کٹ بھی خراب بھیجی تھی، صوبہ سندھ نے عوام میں کرونا کے خلاف آگاہی پیدا کی ورنہ سارا ملک کرونا کی لپیٹ میں ہوتا.

سندھ کے ڈاکٹروں پیرامیڈیکل اسٹاف اور پولیس کے جوانوں نے فرنٹ لائن ٹائیگر کا کام کیا۔

آئندہ کرونا سے متاثر مریضوں کے پاس آپ کو بھیجیں گے گھروں سے تو نکلتے نہیں ہوں.

چینی چوروں کو بچانے کی آخری کوششیں کی جارہی ہیں روزانہ کی بنیاد پر وفاق میں نئے اسکینڈل سامنے آرہے ہیں چینی، آٹے، آئی پی پیز کے بعد اب حاضر ہے دعاؤں کا اسکینڈل

پہلے بھی کئی بار کہا ہے کہ ان کی پریس کانفرنس صرف عوام کی توجہ ہٹانے کے لئے ہے یہ لوگ بری طرح ایکسپوز ہو چکے ہیں اور اپنے بچاؤ کے لیے ہاتھ پاؤں مار رہے ہیں

انکی ہر پریس کانفرنس ایک بات سے شروع ہوکر اسی بات پر ختم ہوجاتی ہے عوام پریشان ہے کہ انکی پریس کانفرنسوں کا لب لباب کیا ہے.

تمہارے وزیراعظم تو کسی سے ہاتھ بھی نہیں ملا رہے آخر کرونا کا ڈر تو ہے نہ

یہ لوگ چاہتے ہیں کہ سندھ کی عوام مرے تو مرے اپنی دو اینٹوں کی علیحدہ مسجد بنا کر رہیں گے۔

سندھ کی حکومت عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دینے کے لئے کوشاں ہے

اگر ہمت ہے تو عمران خان سے سندھ کے رلیف کی بات تو کریں۔

بلاول بھٹو زرداری شروع دن سے وفاق کو کورونا کی تباہ کاریوں سے آگاہ کر رہے ہیں لیکن ان کی تکبر سے بھرپور لیڈرشپ کان ہی نہیں دھر رہی.

لاک ڈاؤن میں نرمی سے جو نقصان ہوگا اس کاذمہ دار وفاق ہو گا.

آج پریس کانفرنس کرنے والے فنکار یاد رکھیں عوام کے عیظ و عضب کا شکار ہونے کے لئے تیار رہو.