لاہور میں کورونا پھیلاؤ روکنے کیلئے علیحدہ پالیسی بنانے کا فیصلہ

وزیراعلیٰ پنجاب کی زیر صدارت خصوصی اجلاس منعقد ہوا، لاہور میں کورونا پھیلاؤ روکنے کیلئے علیحدہ پالیسی بنانے کا فیصلہ – کور کمانڈر لاہور لیفٹیننٹ جنرل ماجد احسان، جنرل آفیسر کمانڈنگ 10 ڈویژن میجر جنرل محمد انیق الرحمٰن ملک،ڈی جی رینجرز پنجاب میجر جنرل محمد عامر مجید،چیف سیکرٹری جواد رفیق ملک، انسپکٹر جنرل پولیس شعیب دستگیر،کمشنر لاہور ڈویژن، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن، طبی ماہرین اوردیگر اعلیٰ عسکری و سول حکام نے اجلاس میں شرکت کی- اجلاس میں کورونا وباء کا پھیلاؤ روکنے کیلئے اقدامات خصوصاً لاہور شہر میں کیسز میں اضافے کی وجوہات کا تفصیلی جائزہ کے ساتھ ساتھ لاک ڈاؤن میں مرحلہ وار نرمی کے حوالے سے مستقبل کے لائحہ عمل پر بھی غور کیا گیا-شرکاء نےفیصلہ کیا کہ لاہور میں کورونا کا پھیلاؤ روکنے کیلئے موثر مینجمنٹ کی علیحدہ پالیسی مرتب کی جائے گی -اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ لا ک ڈاؤن میں نرمی کے حوالے سے کاروبار کے لئے جاری ایس او پیز کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی اورایس او پیز کی خلاف ورزی پر متعلقہ انڈسٹری یا بزنس کے خلاف بلا امتیاز کارروائی ہو گی- اجلاس میں ڈاکٹروں، نرسوں اور پیرا میڈیکل سٹاف کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا گیا- کورکمانڈ لاہورلیفٹیننٹ جنرل ماجد احسان نے پنجاب حکومت کے ساتھ ہر ممکن تعاون جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم آزمائش کی اس گھڑی میں عوام کے ساتھ کھڑے ہیں – عثمان بزدار نے کہا کہ لاک ڈاؤن میں مرحلہ وار نرمی کا فیصلہ سب کی مشاورت سے کیا گیا ہے -عثمان بزدار نے کورونا وباء سے نمٹنے کیلئے بھرپور تعاون پرعسکری قیادت کا شکریہ ادا کیا-سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ پنجاب میں گندم خریداری مہم کا 57 فیصد ہدف پورا کر لیا ہے، 45 لاکھ میٹرک ٹن کا ہدف پورا کریں گے، 85 فیصد باردانہ کاشتکاروں کو جاری کیا جا چکا ہے، کاشتکاروں کو ان کی محنت کا پورا معاوضہ دیں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے اپنے بیان میں گندم خریداری مہم کے حوالے سے بتایا کہ گندم خریداری مراکز پر سماجی فاصلے برقرار رکھنے کے لئے خصوصی اقدامات کئے ہیں، کاشتکاروں کیلئے مراکز پر ضروری سہولتیں فراہم کی گئی ہیں، خود گندم خریداری مہم کی نگرانی کر رہا ہوں، پنجاب حکومت تقریباً 26 لاکھ میٹرک ٹن گندم خرید چکی ہے۔تھیلسیمیا کے مرض سے بچاؤ کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں وزیراعلیٰ نے کہا کہ اس موذی مرض کے خلاف مربوط اور تیزی سے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے اور اس بچاؤ مرض سے بچاؤ کے لئے ضروری تدابیر کا تسلسل ضروری ہے۔عثمان بزدار نے کہا کہ صوبے بھر میں تھیلسیمیا کے مرض کے تدارک کے لئے جامع پالیسی مرتب کی گئی ہےاور اس مرض کے تدارک کیلئے وضع کردہ پالیسی پر موثر انداز میں عملدرآمد کیا جا رہا ہے۔عثمان بزدارنے گجرات کے تھانہ ڈنگہ کی حدود میں ایس ڈی او واپڈا پر تشدد کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او گجرات سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔وزیراعلیٰ نے اپنے کیمرہ مین عاصم امین کے والد کے انتقال پردکھ اور افسوس کا اظہارکیا ہے

Courtesy Jang Urdu