ماہ رمضان شریف کے آغاز سے اب تک صوبے بھر میں 9 ہزار سے زائد منافع خوروں پر 1 کروڑ 13 لاکھ روپے سے زائد کے جرمانے. ڈاکٹر کھٹو مل جیون

کراچی : وزیر اعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی ڈاکٹر کھٹو مل جیون نے کہا ہے کہ بیورو آف سپلائی اینڈ پرائسیز نے ضلعی انتظامیہ کے ساتھ مل کر ماہ رمضان شریف کے آغاز سے اب تک صوبے بھر میں 28 ہزار سے زائد کریانہ , گوشت و مرغی کی دوکانوں, پھل و سبزی فروشوں اور دیگر اشیاءخوردونوش فروخت کرنے والوں کو چیک کیا گیا جبکہ 9 ہزار سے زائد منافع خوروں پر 1 کروڑ 13 لاکھ روپے سے زائد کے جرمانے بھی عائد کئے گئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صوبے بھر میں 3 ہزار 8 سو سے زائد دوکانوں, پھل و سبزیاں فروش اور دیگر اشیاءخوردونوش فروخت کرنے والوں کو چیک کیا گیا اور غیر معیاری اشیاءکی فروخت, سرکاری نرخ نامے کی عدم موجودگی اور ناجائز منافع خوری پر صوبے بھر کے 6 سو 60 سے زائد گراں فروشوں اور دوکانداروں پر 11 لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کیاگیا۔ تفصیلات کے مطابق کراچی ڈویژن میں 102 منافع خوروں پر 4 لاکھ 60 ہزار روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کیا گیا۔ حیدرآباد میں 23 منافع خوروں پر 90 ہزار روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کیا گیا جبکہ گھوٹکی میں 150 منافع خوروں پر 1 لاکھ 60 ہزار روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کیا گیا۔ اس کے علاوہ صوبے کے دیگر اضلاع میں 490 سے زائد منافع خوروں پر 3 لاکھ 87 ہزار روپے سے زائد کا جرمانہ بھی عائد کیا گیا۔