’’کوہلی اور بابر اعظم میں بہتر کون؟ سیریز سے فیصلہ ہوگا‘‘

سڈنی: شعیب اختر کے بعد آسٹریلوی سابق اسپنر بریڈ ہاگ نے بھی کرونا وائرس کے بعد پاک بھارت کرکٹ سیریز کا مطالبہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق آسٹریلوی اسپنر بریڈ ہاگ کا کہنا ہے کہ کرونا کے بعد کرکٹ کو پاکستان اور بھارت کی سیریز درکار ہے، اس سیریز سے بے پناہ دلچسپی پیدا ہوگی۔

بریڈ ہاگ کا کہنا ہے کہ کوہلی اور بابر اعظم میں کون بہتر ہے یہ فیصلہ بھی اس سیریز سے ہوگا، پاک بھارت سیریز کے لیے مداح بھی ترسے ہوئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کو 4 میچوں کی سیریز کھیلنی چاہئے، جس میں 2 ٹیسٹ پاکستان میں ہوں اور دو ٹیسٹ میچز بھارت میں کرائے جائیں۔

سابق آسٹریلوی اسپنر نے کہا کہ مداح کچھ دلچسپ کرکٹ دیکھنا چاہتے ہیں، لہٰذا ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کو تھوڑی دیر کے لیے ختم کریں اور ایسی سیریز کرائی جائیں جو واقعی میں پوری دنیا میں دلچسپی پیدا کریں
بریڈ ہاگ نے کہا کہ موسم گرما میں بھارت اور آسٹریلیا کے خلاف سیریز بھی ملتوی کی جائے اور اس کی بجائے ایشیز سیریز کرائی جائے۔

واضح رہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان 2012-13 کے بعد سے باہمی سیریز نہیں کھیلی گئی ہے، دونوں ٹیمیں آئی سی سی ایونٹ میں ہی مدمقابل ہوتی ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے کرونا متاثرین کی امداد کے لیے پاک بھارت ون ڈے سیریز کی تجویز پیش کی تھی۔

شعیب اختر کا کہنا تھا کہ روایتی حریفوں پاکستان اور بھارت کے مقابلے دنیا بھر میں شائقین کی توجہ کا مرکز بنتے ہیں، دونوں ملک 3 ایک روزہ میچز کی سیریز کھیل کر آمدنی برابر تقسیم کرکے ضرورت مندوں کی مدد کرسکتے ہیں،اس سیریزکا نتیجہ کچھ بھی ہو دونوں ٹیموں کی جیت ہوگی۔