وفاقی کابینہ اجلاس : پبلک ٹرانسپورٹ سمیت دیگر چیزوں کو مرحلہ وار کھولنے کا فیصلہ

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ معاشی طور پر کمزور طبقے کو ریلیف دینے کے لیے لاک ڈاؤن میں نرمی کر کے پبلک ٹرانسپورٹ سمیت دیگر چیزوں کومرحلہ وارکھولا جائے گا۔
وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ہونے والے فیصلوں سے متعلق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کورونا سےمتعلق کل اجلاس ہوگا جس میں تمام وزرائےاعلیٰ شرکت کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس سےبچنےکیلئے ہمیں احتیاطی تدابیر پرسختی سےعمل کرنا ہو گا۔
شبلی فراز نے بتایا کہ کابینہ ارکان نے ایک ماہ کی تنخواہ وزیراعظم ریلیف فنڈ میں دینے کا فیصلہ کیا ہےگزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے ملک میں جاری لاک ڈاؤن کو مرحلہ وار کھولنے کا اعلان کر دیا۔

ٹائیگر فورس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ وقت کی ضرورت تھی اور ہم اس میں شامل نوجوانوں کاشکریہ اداکرتے ہیں۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ موجود ہ صورت حال میں ٹائیگر فورس کا اہم کردار ہو گا کیوں کہ حکومت یا انتظامیہ اکیلے کچھ نہیں کرسکتی۔ ہمیں ایسے مواقعوں کے لیے رضاکاروں کی ضرورت ہوتی ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ حکومت عوام کوہرممکن ریلیف فراہم کرنے کےلیےکوشاں ہے۔ آہستہ آہستہ لاک ڈاؤن کھول رہے ہیں۔
لاک ڈاؤن اس لیے کھول رہے کہ عوام مشکل سے نکل آئیں۔ ایس او پیز پرعمل نہ کیا گیا تو کورونا تیزی سے پھیلے گا اور پھر لاک ڈاؤن کی طرف جانا پڑے گا