1000 بیوروکریٹ سول ملازمین فارغ ۔عمران خان کا ایک اور بڑا فیصلہ

وزیراعظم عمران خان کی حکومت کا ایک اور بڑا فیصلہ سامنے آگیا ۔ملک کی انتہائی طاقتور بیوروکریسی جسے نوکرشاہی بھی کہا جاتا ہے صحیح معنوں میں مشکل میں آگئی ہے 1000 سے زیادہ بیوروکریٹ اور سیول ملازمین فارغ ہونے جا رہے ہیں وزیراعظم عمران خان نے فیصلہ کرلیا ہے ۔

پاکستان کے سینئر صحافی و تجزیہ کار صابر شاکر نے اس حوالے سے اپنی رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان کی سول بیوروکریسی اور نوکرشاہی میں بڑا ایکشن ہونے جارہا ہے باقاعدہ بھل صفائی ہونے والی ہے جس کے نتیجے میں سینکڑوں افسران کی چھٹی ہو جائے گی اور بڑی تعداد میں سرکاری ملازمین کو فارغ کردیا جائے گا اس سلسلے میں وزیراعظم آفس سے حکم جاری ہو چکا ہے حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ 20 سال مدت ملازمت پوری ہونے والے افسران کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے ان کی کارکردگی شیٹ تیار کی جائے اس کو دیکھا جائے پرسنل فائل کو دیکھا جائے کوتاہی دونمبر یا سستی رویہ ورکنگ سٹائل سب کا جائزہ لیا جائے گا اور ایڈورس ریمارکس رکھنے والے افسران کو فارغ کردیا جائے گا حکومت اس سلسلے میں باقاعدہ ایک بورڈ تشکیل دینے جا رہی ہے جس کا پراسیس تقریبا مکمل ہوچکا ہے اور اب عملدرآمد کا وقت آنے والا ہے ایسے افسران کو جن کی کارکردگی غیر تسلی بخش ہے قبل از وقت ریٹائر کر دیا جائے گا اس سلسلے میں کرائیٹیریا بنایا گیا ہے جس کے 20 اہم نکات ہیں جو ان کی زد میں آئیں گے وہ فارغ ہو جائیں گے فیڈرل پبلک سروس کمیشن کے سربراہ کو بورڈ کا سربراہ بنایا جائے گا اور اس سلسلے میں مزید اہم افسران اس میں شامل ہوں گے صابر شاکر کا کہنا ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں یہ ایک بہت بڑا کام ہونے جا رہا ہے اس کے دور رس نتائج مرتب ہوں گے