35 برس سعودی عرب میں گزارنے والے باکمال پاکستانی ڈاکٹر توصیف ہاشمی ۔اب کراچی میں سرگرم عمل

ڈاکٹر توصیف ہاشمی ایک ذہین قابل اور کامیاب پاکستانی ۔زندگی کے انتہائی اہم پینتیس برس سعودی عرب میں گزارے اور پانچ برس قطر کے شہر دوحہ میں گزار ے۔ اب کراچی میں سرگرم عمل ہیں اور اچھا ادبی ذوق رکھتے ہیں سماجی بھلائی کے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ہیں ۔
قسیم نیشنل اسپتال میں ڈائریکٹر سی ایم اے اور پی ڈی کے طور پر فرائض انجام دیئے اس کے علاوہ کنگ فہد اسپیشلسٹ ہاسپٹل بریدہ سعودی عرب میں ڈپٹی ڈائریکٹر رہے وہاں ٹیلی میڈیسن اور سی ایم ای کو دیکھا ۔

سعودی عرب جانے سے پہلے انہوں نے قائداعظم کی مادر علمی سندھ مدرسہ الاسلام سے بنیادی تعلیم حاصل کی پھر ڈی جے سندھ گورنمنٹ سائنس کالج سے تعلیم حاصل کی اور اس کے بعد ڈاؤ میڈیکل کالج سے ایم بی بی ایس کی ڈگری حاصل کی ۔


ڈاکٹر توصیف ہاشمی ایک پرخلوص اور دردمند پاکستانی ہیں جب پاکستان سے باہر تھے تب بھی انکا دل پاکستانیوں کے ساتھ دھڑکتا تھا اور پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کے متمنی رہے واپس آکر کراچی میں رہائش پذیر ہیں اور شہر اور ملک کی ترقی اور بہتری چاہتے ہیں ۔
آپ نے مختلف انٹرنیشنل کانفرنسوں اور سیمینارز میں شرکت کی اور بہترین مقالے پڑھ کر پاکستان کا نام روشن کیا ۔

سعودی عرب اور قطر میں ویلفیر کے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور مختلف پروگرام منعقد کئے اور وہاں پر موجود پاکستانی کمیونٹی کی فلاح و بہبود اور بہتری کے لئے مصروف اورسرگرم عمل رہے ۔

ڈاکٹر توصیف ہاشمی کا خاندان گزشتہ دنوں ایک صدمے سے بھی گزرا ہے جس پر ان کے قریبی عزیزوں دوستوں نے ان سے تعزیت اور افسوس کا اظہار کیا ہے اور مرحومہ کی مغفرت اور بلندی درجات کے لیے دعا بھی کی ہے ۔


ڈاکٹر توصیف ہاشمی بلاشبہ ایک ایسے باکمال پاکستانی ہیں جنہوں نے اپنی بھرپور صلاحیتوں ذہانت اور قابلیت کا بھرپور مظاہرہ کرتے ہوئے دیار غیر میں پاکستان اور پاکستانیوں کا سر فخر سے بلند رکھا اور پاکستان کے اندر دامے درمے سخنے لوگوں کی بہترین فلاح و بہبود کے لیے سرگرم عمل رہے ہیں ۔

پاکستان کی سرکردہ نیوز ویب سائٹ جیوے پاکستان ڈاٹ کام ڈاکٹر توصیف ہاشمی کے خاندان سے ملک کو پیش آنے والے حالیہ صدمے پر ان سے گہرے افسوس اور تعزیت کا اظہار کرتی ہے مرحومہ کی مغفرت اور بلندی درجات کے لئے دعا گو ہے ۔

رپورٹ محمد وحید جنگ ۔جیوے پاکستان ڈاٹ کام