وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ مزید 214 مریض صحت یاب ہو کر اپنے گھروں کو چلے گئے ہیں

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ مزید 214 مریض صحت یاب ہو کر اپنے گھروں کو چلے گئے ہیں جبکہ گذشتہ 24 گھنٹوں میں مزید 363 مثبت کیسز سامنے آئے ہیں ۔یہ پہلی بار ہے کہ بحالی کا تناسب حوصلہ افزا ہے لیکن مقامی منتقلی کے کیسز میں اب بھی مزید اضافہ ہورہاہے۔ یہ بات انہوں نے اتوار کے روز وزیراعلیٰ ہاؤس سے جاری ایک بیان میں کہی۔وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ 3032 ٹیسٹ کیے گئے جن میں 363 نئے کیسز یعنی 11.9 فیصد ٹیسٹ کی تشخیص مثبت آئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت نے اب تک 64052 نمونوں کی جانچ کی ہے اور ان میں 7465 کیسز کا پتہ چلا ہے جو مجموعی ٹیسٹوں کا 11.7 فیصد ہے۔مراد علی شاہ نے بتایا کہ 8 مزید مریض اس وائرس سے انتقال کرگئے اوروائرس سے اموات کی مجموعی تعداد 130 ہوچکی ہے جو کل مریضوں کا 1.7 فیصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ہماری بحالی کا تناسب نسبتاً بہتر ہے۔وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ 5780 مریض زیر علاج ہیں جن میں 4638 گھروں میں ، 615 آئسولیشن سینٹرز میں اور 527 مختلف اسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ 76 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے اور ان میں سے 17 مریض وینٹیلیٹرز پر ہیں۔مراد علی شاہ نے کراچی کا ڈیٹا شیئر کرتے ہوئے کہا کہ 363 میں سے 231 کیس کراچی کے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ 67 کیس ضلع شرقی، 55 ضلع جنوبی ، 45 وسطی ، 28 غربی ، 21 کورنگی اور 15 ملیر کے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ لاڑکانہ اور گھوٹکی میں مقامی ٹرانسمیشن کے مزید کیسز سامنے آئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ لاڑکانہ میں 30 ، گھوٹکی میں 21 ، حیدرآبادمیں 13 ، شہید بینظیر آباد 13 ، خیر پور 10 ، جیکب آباد 9 ، سکھر 8 ، مٹیاری 2 اور دادو میں ایک کیس سامنے آیا ہے ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ مقامی پھیلاؤ کافی تشویشناک ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے اس پر قابو پانے کی کوشش کی ہے لیکن لوگ ایس او پیز پر عمل نہیں کرتےاور نہ ہی سماجی دوری کا خیال رکھتے ہیں ۔انہوں نے کہا اس وبا کو شکست جب ہی ہوسکتی ہے کہ ہم میں سے ہر ایک اپنے اور اپنے کنبہ کے تحفظ کی ذمہ داری اٹھائے۔
عبدالرشید چنا
میڈیا کنسلٹنٹ ، وزیراعلیٰ سندھ