عارف وزیر کے قتل پر گورنر کا متنازع ٹویٹ

پاکستان کے سابق قبائلی علاقے وزیرستان میں قومی اسمبلی کے رکن علی وزیر کے کزن عارف وزیر کو قتل کر دیا گیا ہے

جس کے بعد صوبہ پنجاب کے گورنر چودھری سرور کی اس قتل پر کی گئی ٹویٹ کو پشتون سوشل میڈیا صارفین نے سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔

چودھری سرور نے بعد ازاں یہ ٹویٹ ڈیلیٹ کر دی ہے۔

پنجاب کے گورنر کے آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ سے لکھا گیا کہ ’پہلے این ڈی ایس (افغان خفیہ ایجنسی) کا ارادہ منظور پشتین کے قتل کا تھا۔ مگر وہ چھپ گیا تو پی ٹی ایم کو عارف وزیر کی لاش فراہم کر دی گئی۔ اس قتل کے معاون علی وزیر اور محسن داوڑ ہیں
جنوبی وزیرستان میں قتل کیے گئے عارف وزیر اپنے خاندان کے اٹھارویں فرد ہیں جن کی ٹارگٹ کلنگ کی گئی۔

ایم این اے محسن داوڑ نے عارف وزیر کے قتل کی سخت مذمت کی ہے۔

انہوں نے ٹویٹ کیا ہے کہ اس قتل کے پیچھے پشتون مخالف قوتیں ہیں۔

افراسیاب خٹک نے ٹویٹ کیا ہے کہ انہوں نے علی وزیر اور دیگر رہنماؤں سے تعزیت کی ہے۔
Pakistan24.tv-report