روزگار کے حصول کے لئے گھر سے نکلنے والی ایک پروفیشنل ڈاکٹر خاتون کورونا وائرس کا شکار

کراچی :  ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضی وہاب نے کورونا وائرس کے تناظر میں ایک دکھ بھری کہانی شیئر کردی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے ایک ویڈیو بیان کے ذریعے بتایا کہ روزگار کے حصول کے لئے گھر سے نکلنے والی ایک پروفیشنل ڈاکٹر خاتون کورونا وائرس کا شکار ہوگئی ہے وہ خاتون ڈاکٹر کراچی کے ایک بڑے ہسپتال میں ملازمت کرتی ہے جس کا کورونا کے مریضوں سے کوئی تعلق بھی نہیں ہے لیکن اسکے باوجود وہ خاتون ڈاکٹر کورونا وباء کا شکار ہوگئی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے بتایا کہ اس لیڈی ڈاکٹر  کے دو معصوم بچے ہیں خاتون ڈاکٹر کا ایک بچہ دس ماہ جبکہ دوسرا پانچ برس کا ہے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے سوال کیا کہ وہ دس ماہ کا معصوم بچہ اپنی ماں کے بغیر کیسے رہیگا ؟

یہ ہم سب کے لئے لمحہ فکریہ ہے اس خاتون نے اپنے پروفیشن میں سوشل ڈسٹینسگ بھی اختیار کی مگر ہم میں سے کئی افراد ایسے ہیں جو سماجی دوری اختیار نہیں کرتے اور احتیاطی تدابیر پر عمل نہیں کرتے جسکی وجہ سے اس قسم کی صورتحال کا سامنا ہے بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ اس لیڈی ڈاکٹر کے گھر میں اسکا خاوند، ساس اور سُسر بھی رہائش پزیر ہیں آپ سوچیں ماں اور بچوں میں دوری کتنی کربناک ہوگی انہوں نے عوام سے ایک بار پھر پرزور اپیل کی کہ خدارا حکومتی اور طبی ماہرین کی بتائی گئی احتیاطی تدابیر اختیار کریں۔ ترجمان سندھ حکومت نے کہا کہ اس وباء سے لڑنے کے لئے ہمیں خود کو آئیسولیٹ کرنا ہوگا۔زیادہ سے زیادہ وقت اپنے پیاروں کے ساتھ گھروں پر گزارنا ہوگا تاکہ نہ صرف خود بلکہ دوسروں کو بھی اس وباء سے محفوظ رکھ سکیں۔