ملکی بقاء صوبائیت کی بنیاد پرنہیں مل کرچلنے میں ہے

وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ اپوزیشن سے کوئی دشمنی نہیں، تمام چیلنجز سے مل کر نمٹنا ہوگا، ہمیں دیکھنا ہوگا کہ بھارت سمیت ہمارے دشمن کیسے پروپیگنڈا کرتے ہیں، ملکی بقاء صوبائیت کی بنیاد پرنہیں مل کرچلنے میں ہے، عاصم باجوہ کی اپنی مہارت ہے، ہم ایک ٹیم بن کرکھیلیں گے۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی سوچ کا محورمزدوروں کی فلاح ہے۔
احساس پروگرام کے تحت مزدوروں کیلئے 200 ارب کا پیکیج دیا۔ مجھے فخر ہے کہ ایسے لیڈر کا ورکر ہوں جو غریب کا احساس رکھتا ہے۔ کورونا سے مزدور طبقے پر بہت اثر پڑا ہے۔ وہ دیہاڑی سے محروم ہوگئے۔ احساس پروگرام کے تحت 200 ارب کا پیکیج دیا۔ 12 ہزار روپے غریب لوگوں تک عزت نفس برقرار رکھتے ہوئے پہنچائے۔

حکومت نے مزدوروں کے لیے صحت کارڈ کا اجرا کیا۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا وژن اسلامی ریاست کا ہے کہ کوئی غریب یا مزدور بھوکا نہ سوئے۔ وزیراعظم کی سوچ اور توجہ اس ملک کے غریب طبقے پر ہے۔ چاہتے تو فنڈز کی تقسیم اپنی سیاسی پارٹی کے ذریعے کرتے لیکن ایسا نہیں کیا۔ ہم ایک شفاف میکنزم بنا رہے ہیں، اس حوالے تیاری کررہے ہیں، تاخیر ہونے سے تنقید بھی ہوئی ہے۔ چاہتے ہیں کہ عام افراد اور بیروزگاروں کیلئے متبادل روزگار کا انتظام کیا جائے۔
انہوں نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم کے بعد صحت، انڈسٹریز سمیت کئی ادارے نچلی سطح پرمنتقل ہوچکے ہیں۔ وزیراعظم کی سوچ تھی کہ ہم مکمل لاک ڈاؤن نہیں کرسکتے۔ وزیراعظم شروع سے ہی کہہ چکے ہیں کہ مکمل لاک ڈاؤن نہیں کرسکتے۔ مکمل لاک ڈاؤن کے متحمل نہیں ہوسکتے۔ ہم نے کچھ انڈسٹریزکھولی ہیں لیکن ایس او پیز سخت بنا رہے ہیں تاکہ کوئی نقصان نہ ہو۔
احتیاط کے ساتھ ورکرز کا تحفظ کرنا ہے تاکہ کاروبار زندگی بھی چلتا رہے۔ خان صاحب کی ترجیح ہے کہ موجودہ وباء سے بچا جائے اور عوام کی زندگی پر اثر نہ پڑے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان کے دوران وزیراعظم نے مزدوروں کا خیال رکھنے کی بات کہی۔ وزیراعظم نے سعودی جیلوں میں موجود پاکستانی قیدیوں کی رہائی کی بات کی اور واپسی ممکن بنائی۔
ہم ملائیشیا سے بھی قیدیوں کو واپس لائے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا کا کردار اور اس کے ورکرز میرے دل کے قریب ہیں۔ ہم لوگوں کا ٹیم ورک ہے،عاصم باجوہ صاحب کی اپنی مہارت ہے، ہم مل کراورایک ٹیم بن کرکھیلیں گے۔ وزارت اطلاعات پرانے خطوط پرچل رہی ہے۔ اپوزیشن کے ساتھ کوئی ذاتی دشمنی نہیں ہے۔ آئین میں سب کو برابری کی بنیاد پرکام کرنے کی آزادی ہے۔ اس پر پورا یقین رکھتے ہیں۔ ہمیں اندرونی و بیرونی چیلنجز سے نمٹنا ہے۔ وزیراطلاعات شبلی فراز نے کہا کہ آج کل جنگیں نہیں ہوتی بلکہ میڈیا وارز ہوتی ہیں۔ ہمیں دیکھنا ہے کہ بھارت سمیت ہمارے دشمن ملک ہمارے خلاف کیسے پروپیگنڈا کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی بقاء انفرادی یا صوبائیت کی بنیاد پر نہیں مل کر چلنے میں ہے