اشفاق تولہ۔ ٹیکس پلاننگ اور اکاؤنٹنگ انڈسٹری کا قابل فخر نام

لوگ انہیں ٹیکس پلاننگ کا گرو مانتے ہیں ۔وہ ایک باکمال پروفیشنل ہیں 25 سال سے زیادہ تجربہ ۔ان کا کیریئر شاندار کامیابیوں کی داستان سناتا ہے ۔پاکستان میں ٹیکس پلاننگ میں وہ اپنا ثانی نہیں رکھتے ۔انشورنس اور بزنس ایڈوائزری سروسز سےلےکر فنا شل پروڈکٹ ڈیزائننگ اینڈ لانچنگ تک انہیں ان تمام کاموں میں ملکہ حاصل ہے ۔


کارپوریٹ افیئرز کی تو انہیں دائی قرار دیا جاتا ہے ۔یعنی ان سے نہ تو کچھ چھپا ہوا ہے اورنہ کچھ ایسا ہے جو وہ جانتے نہ ہوں ۔
تمام باریکیوں کو وہ بخوبی سمجھتے ہیں اور چھوٹی سے چھوٹی بات پر ان کا دھیان رہتا ہے ۔
یہ قدرت کا ان پر خاص کرم ہے ۔


ان کی خداداد صلاحیتیں ہیں جو ان کو اس شعبے میں دیگر تمام لوگوں سے منفرد اور نایاب بناتی ہیں ۔
چارٹرڈ انسٹیٹیوٹ آف پاکستان سے فارغ التحصیل ہیں ۔
ان کے پاس متعدد انتہائی اہمیت کی حامل اداروں کی ممبرشپ ہے جو ان کی قابلیت اور مہارت کا پتہ دیتی ہے ۔
ان میں حکومت پاکستان کی پرائیوٹائزیشن کمیٹی ۔

حکومت پاکستان کی وزارت خزانہ کی سب کمیٹی برائے ٹیکسیشن فار پروموشن آف اسلامک بینکنگ ۔
اس کے علاوہ وہ چیئرمین ہیں آلٹرنیٹ ڈسپیوٹ ریزولیشن کمیٹی ۔
اس کے علاوہ متعدد حکومتی باڈی کے ممبر بھی ہیں جن میں ٹیکس ریفارم کمیشن ۔
ٹیکس ایڈوائزری کونسل ۔
ٹیکسیشن ریفارم کوآرڈینیشن گروپ ۔
ریونیو ایڈوائزری کونسل ۔
پرائیویٹائزیشن بورڈ
نمایاں ہیں ۔

ان کی پیشہ ورانہ قابلیت ذہانت اور کامیابیاں اپنی جگہ لیکن ان سب سے ہٹ کر وہ ایک خوش اخلاق خوش مزاج اور انتہائی خوشگوار طبیعت کے مالک انسان ہے انکی شائستگی اور پرخلوص طبیعت انکی اعلی اخلاقی اقدار ان کے مضبوط خاندانی پس منظر کی بھرپور عکاسی کرتی ہیں ۔

لوگوں نے عام طور پر سن رکھا ہے گھڑی میں تولہ گھڑی ماشہ ۔

لیکن اشفاق تولہ وہ والے تولہ نہیں ہیں جو گھڑی گھڑی بدل جائیں ۔
اشفاق تولہ تو سچے اور کھرے انسان ہیں اور جو پوزیشن لیتے ہیں اس پر ڈٹ جاتے ہیں ۔
پاکستان میں اکاؤنٹنگ انڈسٹری کا ذکر اب اشفاق تولہ کے نام کے بغیر مکمل نہیں ہو سکتا انہیں انٹرنیشنل ٹیکس کارپوریٹ فائنینس ٹیکس ایڈوائزری کریٹیو اسٹریٹجی اور اسٹریٹجیک پلاننگ میں جو مقام حاصل ہے وہ کسی اور کے نصیب میں نہیں ۔یہ ان کی خوش نصیبی ہے یہ ان پر قدرت کا خاص کرم بھی ہے اور یہ ان کی محنت اور قابلیت بھی ہے ۔

پاکستانیوں کو یقینی طور پر ایسے ہی ہم وطن پر ہمیشہ ناز اور فخر کرتے رہنا چاہیے ۔

تحریر سالک مجید