پی پی کے مشیر نے گورنر سندھ پر الزام لگاکر سندھ کی عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کی ہے، جمال صدیقی

تحریک انصاف کے رہنماؤں فردوس شمیم نقوی ، خرم شیر زمان، جمال صدیقی کی انصاف ہاؤس میں پریس کانفرنس

رکن سندھ اسمبلی شہزاد قریشی، عمران صدیقی بھی موجود

فردوس شمیم نقوی گفتگوپی پی کے مشیر نے گورنر سندھ پر الزام لگاکر سندھ کی عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کی ہے، جمال صدیقی

جب بھٹو کو پھانسی ہوئی تو اسی نثار کھڑو نے لاڑکانہ میں مٹھائی بانٹی، جمال صدیقی

سندھ حکومت ان کا اصل چہرہ دیکھیں کہ یہ کتنے پی پی سے مخلص ہیں، جمال صدیقی

ایسی بہت ساری کالی بھیڑیں پیپلزپارٹی میں ابھی بھی موجود ہیں، جمال صدیقی

جنہوں نے بھٹو، بینظیر اور آج سندھ کی عوام کو نقصان پہچا رہے ہیں، جمال صدیقی

جنہیں ایجوکیشن کی اسپیلنگ نہیں آتی وہ ہائیر ایجوکیشن کے مشیر ہیں، جمال صدیقی

آج تک سندھ کی تعلیم درست نہیں ہوسکی ہے، جمال صدیقی

سندھ کی عوام ان کے چہرے پہچانے ان لوگوں نے نہ صحت تعلیم روزگار سب سندھ سے چھین لیا، جمال صدیقی

ایک منسٹری کے لیے ایسے مداری نفرت کا بیج بو رہے ہیں، جمال صدیقی

تحریک انصاف کی حکومت سندھ کے لوگوں کو حقوق دے گی، جمال صدیقی

نثار کھڑو اپنا قبلہ درست کریں اپنے محکمے پر دہیان دیں، جمال صدیقی

نئے لوگوں کی بھرتی کی بجاء من پسند لوگوں کو ایکسٹینشن پر رکھا ہوا ہے، جمال صدیقی

نثار کھڑو جیسے لوگ تین دفعہ بھی پیدا ہوجائے ہیں تو وزیر اعظم کی برابری نہیں کرسکتے، جمال صدیقی

سندھ کی عوام کو احساس پروگرام کے ذریعے اب تک 20 ارب روپے دیے جاچکے ہیں، جمال صدیقی

سندھ کی عوام اب ان حکمرانوں کا گریبان پکڑے گی جنہوں نے سندھ کے حقوق کھائے ہیں، جمال صدیقی


منجانب، میڈیا ڈیپارٹمنٹ پی ٹی آئی کراچی

فردوس شمیم نقوی

آج شبنم ناہید بھٹو کون ہیں اور کہاں ہیں،

پی پی بتائے آج وہ لوگ کہاں گئے،

ہم نے بات سنی کہ وہ روڈ حادثے میں مرگئی،

اس کی کوئی تفتیش نہیں ہوئی

بینظیر بھٹو کی بھابھی تھی،

امداد علی بھٹو کی بیوی تھی اور وہ بینظیر کی تمام اسٹیٹ کے مئنيجر تھے،

مرتضيٰ بھٹو اور ناہید شبنم کا مرنہ عجب کہانی ہے،

دال میں کچھ کالا نظر آرہا ہے،

اومنی گروپ کے بہت سارے لوگوں نے داڑھی رکھ لی،

کورونا وائرس اتنی تیزی سے نہیں پھیلا جتنی تیزی سے اومنی کو قرضے دیے گئے،

سمٹ بینک کو بھی سندھ بینک پر چپکایا جارہا تھا،

پاکستان کے کسی گروپ کو اتنا قرضہ آج تک نہیں دیا گیا،

اب تو ساری دال ہی کالی ہے،

اومنی گروپ 2008 کے پاس 6 کمپنیاں تھی،

2018 تک 83 کمپنیاں ہوگئی

ان میں بیشتر بے نامی کمپنیاں ہیں،

یہ ہے زرداری گروپ اور اومنی گروپ کا رشتہ

جس کا جواب دینا ان کو مشکل پڑا ہوا ہے

اس لیے یہ پوری ملک پر بھاری اور زر کا پجاری ہے،

آنٹی کرپشن کا اس میں ذکر ہے،

جب بھی سندھ کے سیاستدانوں کو کوئی دشواری پیش آتی ہے تو وہ ایک سازش کرتے ہیں،

پچھلی دفعہ بھی اسی وقت سینیٹ کے چیرمین کے خلاف بل آیا،فردوس شمیم نقوی

بخت ٹاور کی اسٹوری آج سامنے آئی ہے،

1998 میں بینظیر بھٹو نے یہ زمین رخسانہ اور شبنم بھٹو سے خریدی،

بینظیر بھٹو نے خط لکھا کہ یہ زمین میرے نام کرائی جائے،

ساتھ ہی انور مجید نے خط لکھا کہ یہ زمین میرے نام کی جائے،

محترمہ نے کہا تھا کہ میری سیاست سے اصف زرداری کا کوئی تعلق نہیں،

بعد میں پرچی آئی اور زرداری بھٹو بن گئے،

ریجنٹ سروس کمپنی ایک بے نامی کمپنی ہے

اس بے نامی کمپنی میں حسین لوائی کو 950 ملین میں بیچا گیا،

لوائی صاحب نے اسی بکڈنگ کے اندر تین منزلیں بھی خریدلیں،زرداری صاحب کے تعلقات کا سب کو اندازہ ہے وہ نواز شریف سے بھی آگے ہیں،

ان پر کوئی مشکل آتی تھی تو ایل او سی پر بمباری ہوجاتی تھی،

مراد علی شاہ ٹی وی پر دکھتی ہیں گراؤنڈ پر کہیں نظر نہیں آتا،

شہلا رضا سچ کہتی ہیں کہ راشن کسی کو دکھائی نہیں دیا،

جو خرچ کرتے ہیں 12 سال سے زمین پر نظر نہیں آرہا،

ناصر حسین شاہ 10 ہزار بسین لارہا تھا وہ نظر نہیں آرہی،فردوس شمیم نقوی

سندھ کے اندر 26 فروری کو پہلی موت ہوئی

نیویارک میں 27 فروری کو پہلی موت ہوئی

30 اپریل تک ایک ملک جو ڈیڑھ لاکھ ٹیسٹ روزانہ کرتا ہے

جس کے ہسپتال دنیا کے مانے ہوئے ہسپتال ہیں،

اس شہر میں 55 ہزار لوگ انتقال کرگئے،

میں اپنے رب کا شکر ادا کرتا ہوں،

امید کرتا ہوں وزیراعلیٰ کو بھی عقل آئے

انہوں نے آج کاروبار کھولنا شروع کردیا ہے،

انہیں پتہ ہے ملک ہفتہ دو ہفتے بند ہوسکتا ہے،

صوبہ سندھ کو چالیس دن ہوگئے

لوگ آج بیروزگاری کا چہلم منارہے ہیں،

یہاں موت کا مقابلہ موت سے ہے

ایک موت کورونا اور دوسری بھوک کی موت ہے،

8 لوگوں نے اب تک سندھ میں خودکشی کی ہے

ہمیں بتائیں کہ کورونا کس ریٹ پر سندھ حکومت بند کرے گی،

کس بنیاد پر لاک ڈاؤن بڑھایا جارہا ہے بتایا تو جائے،

نیشنل کمانڈ اجلاس میں اچھے بھاشن دیتے ہیں اور شام کو سی ایم ٹی وی پر بتاتے ہیںفردوس شمیم نقوی

سندھ کے اندر 26 فروری کو پہلا کیس آیا

نیویارک میں 27 فروری کو پہلی موت ہوئی

30 اپریل تک ایک ملک جو ڈیڑھ لاکھ ٹیسٹ روزانہ کرتا ہے

جس کے ہسپتال دنیا کے مانے ہوئے ہسپتال ہیں،

اس شہر میں 55 ہزار لوگ انتقال کرگئے،

میں اپنے رب کا شکر ادا کرتا ہوں،

امید کرتا ہوں وزیراعلیٰ کو بھی عقل آئے

انہوں نے آج کاروبار کھولنا شروع کردیا ہے،

انہیں پتہ ہے ملک ہفتہ دو ہفتے بند ہوسکتا ہے،

صوبہ سندھ کو چالیس دن ہوگئے

لوگ آج بیروزگاری کا چہلم منارہے ہیں،

یہاں موت کا مقابلہ موت سے ہے

ایک موت کورونا اور دوسری بھوک کی موت ہے،

8 لوگوں نے اب تک سندھ میں خودکشی کی ہے

ہمیں بتائیں کہ کورونا کس ریٹ پر سندھ حکومت بند کرے گی،

کس بنیاد پر لاک ڈاؤن بڑھایا جارہا ہے بتایا تو جائے،

نیشنل کمانڈ اجلاس میں اچھے بھاشن دیتے ہیں اور شام کو سی ایم ٹی وی پر بتاتے ہیں

فردوس شمیم نقوی

بخت ٹاور کی اسٹوری آج سامنے آئی ہے،

1998 میں بینظیر بھٹو نے یہ زمین رخسانہ اور شبنم بھٹو سے خریدی،

بینظیر بھٹو نے خط لکھا کہ یہ زمین میرے نام کرائی جائے،

ساتھ ہی انور مجید نے خط لکھا کہ یہ زمین میرے نام کی جائے،

محترمہ نے کہا تھا کہ میری سیاست سے اصف زرداری کا کوئی تعلق نہیں،

بعد میں پرچی آئی اور زرداری بھٹو بن گئے،

ریجنٹ سروس کمپنی ایک بے نامی کمپنی ہے

اس بے نامی کمپنی میں حسین لوائی کو 950 ملین میں بیچا گیا،

لوائی صاحب نے اسی بکڈنگ کے اندر تین منزلیں بھی خریدلیں،خرم شیرزمان

مراد علی شر کو اب شیطان والا شر کہا جائے،

مراد علی شاہ صوبے میں شر پھیلا رہے ہیں،

اور آجکل وہ کراچی کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں،

مراد علی شر آجکل لوگوں کو لڑا رہے ہیں،

کرائے داروں کو مالکان سے، مزدوروں کو مالکان اور عوام کو پولیس سے لڑا رہے ہیں،

ڈبل سواری پر پابندی لگادی گئی ہے،

مراد علی شر اپنی شیطانی کراچی کو نقصان پہچانے میں لگارہے ہیں،

لاک ڈاؤن کونسا ہے ہزاروں لوگ راستوں پر موجود ہیں،

لاک ڈاؤن اس وقت سیاسی ہے کاروباری شخصیات کے لیے،

مراد علی شر خد سی ایم ہاؤس میں چھپے ہوئے ہیں،

کاروباری بندش کراچی والوں کے لیے قبول نہیں،

ان کا لاک ڈاؤن مکمل فیل ہوچکا ہے،

ہم کہتے ہیں کہ سمارٹ لاک ڈاؤن ہونا چاہیے،

اب غریب گھروں سے نکلیں گے،

مراد علی شاہ آپ اربوں پتی ہیں لیکن عوام غریب ہے،

کاروبار کرنے والے شخصوں کے گھروں میں فاقے پڑے ہوئے ہیں،

آج تک کراچی کی کاروباری شخصیات انتظار کررہی ہیں،

لوگوں کو پانی صحت نہیں مل سکا

لوگوں کو بھوکا مارنے کا ٹھیکا مراد علی نے لےلیا ہے،

فوری ایس او پی بناکر کاروبار کھولا جائے،