صوبہ سندھ کے تمام اسکول فیس کی مد میں 20 فیصد رعایت دینے کے پابند ہیں : بیرسٹر شبیر شاہ

سندھ ہائی کورٹ نے تمام پٹیشن خارج کردیں۔ ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل سندھ
کراچی : ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل سندھ بیرسٹر شبیر شاہ نے کہا ہے کہ سندھ ہائی کورٹ نے اسکولوں کی فیسوں میں 20 فیصد رعایت دینے کے سلسلے میں تمام داخل شدہ پیٹیشنز خارج کردی ہیں اس طرح اب سندھ کے تمام اسکول کابینہ کے فیصلے کے مطابق فیسوں کی مد میں 20 فیصد رعایت دینے کے پابند ہیں اور سندھ ہائی کورٹ نے اس سلسلے میں جو حکم امتناعی جاری کیا تھا وہ اب نافذ العمل نہیں رہا۔ سندھ ہائی کورٹ میں سندھ حکومت کی پیروی بیرسٹر شبیر شاہ نے کی۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ سندھ کابینہ نے رولز میں ترمیم کردی ہے اس کے تحت صوبے بھر کے تمام اسکول اس بات پر پابند ہوں گے کہ وہ اپریل اور مئی 2020 کی فیسوں میں 20 فیصد رعایت دینے کے پابند ہوں گے۔بیرسٹر شبیر شاہ نے مزید بتایا کہ اگر کسی بھی اسکول نے فیسوں میں 20 فیصد رعایت نہیں دی اور قانون کی خلاف ورزی کی تو اس کے خلاف قانونی / تادیبی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ مزید برآں اس ترمیم شدہ فیصلے کا اطلاق سندھ بھر کے تمام اسکولوں پر نافذالعمل ہوگا۔ بیرسٹر شبیر شاہ نے کہا کہ سندھ کابینہ نے قوانین میں تبدیلی کی تھی اور ان ترمیم شدہ قوانین کی روشنی میں نوٹیفیکیشن جاری کر دیاگیا ہے۔