مرکزی رہنما پی ٹی آئی طاہر ملک کا کراچی کے ہسپتالوں میں 20 سے زائد ڈاکٹرز، نرسز اور پیرا میڈیکل اسٹاف کا کورونا سے متاثر ہونے پر شدید تشویش کا اظہار

کراچی:  پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما طاہر ملک نے کراچی کے ہسپتالوں میں 20 سے زائد ڈاکٹرز،نرسز اور پیرامیڈیکل اسٹاف کا کورونا سے متاثر ہونے پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ صورتحال کی تمام تر ذمہ داری حکومت سندھ پر عائد ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے کورونا سے بچاو کا جو سامان بھیجا تھا وہ حکومت سندھ سے وابستہ افراد اپنے گھروں پر لے گئے جس کی وجہ سے فرنٹ لائن پر لڑنے والے سپاہی بنا ساز و سامان کے جنگ میں مصروف عمل ہیں۔ بروقت حفاظتی سامان مہیا نہ کرنے کی مجرمانہ حرکت کی تمام تر ذمہ داری حکومت سندھ پر عائد ہوتی ہے۔انہوں نے کہا 12 سال سے مسلسل پیپلز پارٹی برسراقتدار ہے سوال یہ ہے کہ ہر سال 84 ارب روپے صحت کا بجٹ کہاں خرچ ہوتا ہے اس کا حساب دیا جائے۔انہوں نے کہا کہ 12 سال سے زرداری صاحب کی بہن عذرا پیچوہو صحت کی وزیر اور بہنوئی فضل پیچوہو صحت کے کرتا دھرتا ہیں ان سے کون حساب لے گا۔وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ عذرا پیچوہو کا موازنہ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد سے کرتے ہیں۔ ڈاکٹر یاسمین راشد ایک ذمہ دار خاتون ہیں جو فرنٹ فٹ پر آ کر تمام تر صورتحال سے میڈیا کو اپڈیٹ رکھتی ہیں۔