عمران خان نے سول ملٹری تعلقات خراب ہونے کا تاثر ختم کردیا ۔آئی ایس پی آر کے سابق سربراہ کو وزارت اطلاعات میں لاکر نیا قومی بیانیہ تشکیل دینے کا عزم

آئی ایس پی آر کے سابق سربراہ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ کو وفاقی وزارت اطلاعات میں اہم ذمہ داریاں دیکھ کر وزیراعظم عمران خان نے سول ملٹری تعلقات خراب ہونے کی افواہوں کادم توڑ دیا ہے اور عاصم سلیم باجوہ وزارت اطلاعات کی ری اسٹرکچرنگ کرکے نئے قومی بیانیہ کی تشکیل میں اہم کردار ادا کریں گے جب کہ سینیٹ میں قائد ایوان شبلی فراز کو وزیر اطلاعات بناکر وزیراعظم عمران خان نے پیغام دے دیا ہے کہ اب وہ پی ٹی آئی کے اصل چہروں کو آگے لائیں گے

اب تک جو سمجھوتے ہونے تھے ہوچکے اب پی ٹی آئی اپنی اصل شکل میں آگے بڑھے گی ۔
اس حوالے سے سینئر صحافی اور تجزیہ نگار صابر شاکر کا کہنا ہے کہ کچھ عرصہ پہلے بڑے منظم انداز سے ایک مہم شروع کی گئی تھی جس میں تاثر دیا جارہا تھا کہ سول ملٹری تعلقات خراب ہورہے ہیں اور وزیراعظم عمران خان کا چلچلاؤ ہے تین لوگ ان کے گھر پر گئے ہیں اور استعفی مانگا گیا ہے کیونکہ لاک ڈاؤن کرنے پیسے اور فنڈز کے اجراء کے اختلافات کی وجہ سے عمران خان کو ہٹانے کا فیصلہ ہوگیا ہے ۔
صابر شاکر نے کہا کہ اس وقت بھی ہم نے کہا تھا کہ یہ سب افواہیں ہیں ان میں کچھ حقیقت نہیں ہے اور وزیراعظم عمران خان کی حکومت مضبوط ہے وہ تیزی سے آگے بڑھیں گے اور اپنے فیصلے کریں گے اور اب یہ باتیں سامنے آنا شروع ہوگئی ہیں ہمارا کام ہے سنسنی نہیں پھیلاتے لوگ ہمیں جانتے ہیں عمران خان نے پھر سب کو حیران کر دیا ہے فردوس عاشق اعوان کو ہٹا کر بڑا فیصلہ کیا ہے وہ پی ٹی آئی کی بنیادی رکن نہیں تھی دیگرجماعتوں سے ہو کر یہاں آئی تھی لیکن اپنا کام بڑی محنت سے کر رہی تھی البتہ وزیراعظم آفس میں ان کے بارے میں اطلاعات اچھی نہیں آ رہی تھی اب وزیراعظم عمران خان فیصلہ کرچکے ہیں کہ پی ٹی آئی کو پی ٹی آئی کے منشور پر لے کر چلیں گے اب تک جو سمجھوتے ہونے تھے ہوچکے اب وہ پی ٹی آئی کے اصلی چہرے سامنے لے کر آئیں گے


اسد عمر کو دوبارہ فارم میں لے آئے ہیں اسد عمر کو این سی او سی کا سربراہ بنا دیا گیا ہے جو صوبوں اور ملٹری لیڈرشپ سے رابطے میں ہیں اور بھرپور اجلاس کر رہے ہیں وزیراعظم عمران خان نے عاصم سلیم باجوہ کو اہم ذمہ داری دے کر ثابت کر دیا ہے کہ سول ملٹری تعلقات نارمل ہیں اور ایک پیج پر ہیں اب وزارت اخلاق کی ریسٹ کریں ہوگی اب یہ صرف اشتہار دینے والا ادارہ نہیں رہے گا بلکہ قومی بیانیہ کی تشکیل دینے میں اپنا اہم کردار ادا کرے گا عاصم سلیم باجوہ نے جس طرح آئی ایس پی آر کو ایک روایتی ادارے سے ہٹا کر ایک زبردست ادارہ بنایا جس نے قومی بیانیہ کو لے کر آگے بڑھنے کہ ہم اقدامات کیے اور مخالفین نے بھی ان کی کارکردگی کو سراہا اور آئی ایس پی آر سے دشمن بھی گھبراتا ہے زبردست میڈیا اسٹریٹجی بنا کر دی تھی جو کامیاب رہی اب وزیراعظم عمران خان عاصم سلیم باجوہ کے تجربے سے فائدہ اٹھائیں گے اور ان کے ساتھ ساتھ ممتاز شاعر احمد فراز کے بیٹے شبلی فراز کو نیا ٹاسک دیا گیا ہے پی ٹی آئی کے کارکنوں اور ہمدردوں نے شبلی فراز کے حوالے سے وزیراعظم کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے