رویت ہلال کمیٹی نے صدقہ فطرہ اور فدیے کی رقم کا اعلان کر دیا

مرکزی رویت ہلال کمیٹی نے صدقہ، فطرہ اور فدیے کی رقم کا اعلان کر دیا ہے،  رویت ہلال کمیٹی پاکستان کے چیئرمین مفتی منیب الرحمٰن کے مطابق صدقہ، فطرانہ اورفدیے کی کم ازکم مقدار
چکی کا آٹا دو کلو گرام 125روپے فی کس ہے
اور گندم کے حساب سے یہ فطرہ کی کم سے کم رقم ہے۔
جوکے نصاب سے فطرہ 320روپے
کھجور کے نصاب سے1600روپے
کشمش کے نصاب سے 1920روپے
 پنیر کے نصاب سے3540روپے بنتا ہے۔
جو لوگ روزہ نہیں رکھ سکتے وہ تیس روزوں کا فدیہ بالترتیب :
چکی کا آٹا:3750روپے 
جو 9,600روپے
کھجور48,000روپے
کشمش 57,600روپے
پنیر 1,06,200 روپے اداکریں۔
مفتی منیب الرحمن نے بتایا کہ جن حضرات کو اللہ تعالیٰ نے رزق میں کشادگی عطاکی ہے اور وافر دولت سے نوازاہے، وہ اپنی مالی حیثیت کو پیشِ نظر رکھتے ہوئے جَو یا کھجور یا کشمش یا پنیر کے حساب سے فطرہ، فدیہ اور کفارات اداکریں تاکہ نعمتِ مال کا تشکُّر بھی ہو اور نادار طبقات کی بھی ضروریات پوری ہوں۔
رویت ہلال کمیٹی نے اپنے خصوصی نوٹ میں بتایا کہ چکی کے آٹے کی قیمت معلوم کرکے فطرہ/فدیہ بتایا گیا ہے، اللہ کی راہ میں عمدہ چیز دینی چاہیے۔ جو لوگ اس قیمت کا آٹا استعمال کرتے ہیں۔ وہ اس حساب سے دو کلو کی قیمت دے دیں ۔اس سال زکوٰۃ کا نصاب46,329/=روپے ہے۔