کمانڈر سدرن کمانڈ کی مائننگ کمپنیوں کو بلوچستان میں سرمایہ کاری کی دعوت

کوئٹہ ۔ کمانڈر سدرن کمانڈ نے مائننگ کمپنیوں کو بلوچستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیدی۔ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ کہتے ہیں کہ افغانستان کے بعد پاک ایران بارڈر پر بھی باڑ کی تعمیر شروع کر رہے ہیں۔
بلوچستان میں معدنی شعبے کی ترقی کے لئے کوئٹہ میں سیمینار کا انعقاد  کیا گیا۔ کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ معدنیا ت کے حوالے سے سیمینار سیکھنے کے قابل تھا اور ہم نے بہت کچھ سیکھا۔ سیمینار حکومت کی سنجیدگی کا عکاس ہے کہ وہ معدنیات کے شعبے کو ترقی دینا چاہتی ہے۔
کمانڈر سدرن کمانڈ نے کہا کہ بلوچستان کی معدنیات کا بہت اسکوپ ہے۔ ہمیں مل بیٹھ کر آگے کا راستہ نکالنا ہو گا، ہم 70 سالوں سے محرومی کا رونا رو رہے ہیں، صوبے کو امن وامان، بارڈر پار دہشت گردی، انفرا اسٹرکچر، پالیسی اور شفافیت کی کمی کا سامنا رہا ہے۔
لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ بلوچستان میں امن قائم ہو چکا ہے، اب ترقی کا مرحلہ شروع کر نے جا رہے ہیں۔ میری درخواست ہے کہ اس سیمینار کو سرمایہ کاری کانفرنس کی جانب لے جایا جائے۔ یہاں حکومت، مسلح افواج اور اپیکس کمیٹی موجود ہے ، ہمیں مل کر مسائل کا حل نکالنا ہو گا۔
کمانڈر سدرن کمانڈ نےکہا کہ بلوچستان میں معدنیات کے شعبے میں بہت سے موقع ہیں، بہتر سیکورٹی اور جدید مائننگ سے اس شعبے کو ترقی دی جاسکتی ہے،بلوچستان میں کوئی نوگو ایریا نہیں ، مائننگ کمپنیاں آئیں انہیں مکمل تحفظ دیں گے، لوکل مائنز اونرز ہمارے پاس آئیں انکی بھی سیکورٹی کے مسائل حل کریں گے ۔
کمانڈر سدرن کمانڈ نے کہا کہ پاک افغان بارڈر پر روزانہ 2.5 کلو میٹر باڑ تعیمر کی جا رہی ہے اب تک بلوچستان میں افغانستان سے منسلک بارڈر پر 370  کلو میٹر باڑ تیعمر کر چکے ہیں ،کمانڈر سدرن کمانڈ نے کہا کہ آئندہ ہفتے ایران سے منسلک بارڈر پر بھی باڑ کی تعیمر شروع کر دی جائے گی ، جس سے اسمگلنگ اور دہشت گردی کی روک تھام میں مدد ملے گی بلکہ معاشی حالات بھی بہتر ہوں گے ۔
لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے پاکستان سپر لیگ کا چوتھا ایڈیشن جیتنے پر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو مبارک باد دی اور کہا کہ یہ جیت بہت ضروری تھی بلوچستان کے عوام گلیڈی ایٹرز کے بھرپور استقبال کے لئے تیار ہیں



اپنا تبصرہ بھیجیں