سلیم ملک نے 19 سال بعد فکسنگ کے معاملے پر معافی مانگ لی

سابق کپتان اور ٹیسٹ کرکٹر سلیم ملک نے فکسنگ کے معاملے پر مداحوں سے معافی مانگ لی، 19 سال بعد فکسنگ معاملے پر آئی سی سی، پی سی بی سے تعاون کرنے کا اعلان کردیا۔اپنے ویڈیو پیغام میں57 سالہ سلیم ملک کا کہناتھا کہ میں اپنے کیے پر مداحوں سے معافی مانگتاہوں ، مداحوں کے دل دکھے اس لیے سب سے معافی چاہتاہوں ، آئی سی سی سے غیر مشروط تعاون کروں گا اور پاکستان کرکٹ بورڈ سے بھی تعاون کروں گا ۔
ان کا کہناتھا کہ انسانی حقوق قوانین کے تحت میرے ساتھ بھی نرمی برتی جائے ، فکسنگ میں ملوث باقی کرکٹرز کو دوسرا موقع دیا گیا ، مجھے بھی دوسرا موقع دیا جائے
اس سے قبل 2012ء میں بھی سلیم ملک نے اسی طرح کا اعلان کیا تھا اور نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں کام کے لیے لیٹر بھی لے لیا تھا لیکن پھر روک دیا گیا۔

یاد رہے کہ ا س سے قبل ایک بیان میں ہیڈ کوچ انضمام الحق نے بھی سلیم ملک کے حق میں بیان جاری کیا تھا جبکہ ثقلین مشتاق کا کہناتھا کہ میری عمران خان اور چیئرمین پی سی بی سے درخواست ہے کہ سلیم ملک کو بہت رگڑا لگ گیا اب ان پر پابندی ختم کر دینی چاہیے ، جب وہ کرکٹ میں آئیں گے تو وہ جان لڑ دیں گے۔

انضمام الحق کا کہناتھا کہ سلیم ملک کے پاس بہت سا تجربہ اور مواد ہے جس سے کھلاڑی فائدہ اٹھا سکتے ہیں