تیندوے کا کھویا بچہ واپس ملا تو ماں نے کیا کیا؟

مہاراشٹر: بھارتی ریاست مہاراشٹر کے ایک گاؤں میں تیندوے کا بچہ انسانوں کے علاقے میں نکل آیا، جس سے کسان اس کی ماں کی آمد کے خوف میں مبتلا ہو گئے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق سوشل میڈیا پر ایک ایسی ویڈیو وائرل ہو گئی ہے جس میں تیندوے کا ایک معصوم بچہ جنگل سے نکل پر کھیتوں میں آ گیا ہے اور راستہ کھو بیٹھا ہے۔

چار دن قبل ضلع نندید میں بھوسی گاؤں کے کسانوں نے جوار کی کٹائی کے دوران دیکھا کہ تیندوے (لیپرڈ) کا ایک بچہ ایک کھیت میں کیلے کے خشک پتوں کے درمیان اکیلا بیٹھا ہوا ہے، کسانوں نے تیندوے کے بچے کی موجودگی کی اطلاع فوراً فاریسٹ ڈپارٹمنٹ کو دے دی
محکمہ جنگلی حیات کے اہل کاروں نے گاؤں کا وہ حصہ خالی کرا لیا جہاں تیندوے کا بچہ موجود تھا، اور بچے کو ایک ٹوکری میں بند کر دیا تاکہ وہ مزید نہ بھٹکے، اہل کاروں نے آس پاس کیمرے بھی لگا دیے، تاکہ اگر اس کی ماں آئے تو اس کی حرکات نوٹ ہو سکیں
دو دن انتظار کے بعد مادہ تیندوا اپنے بچے کی تلاش میں وہاں آئی اور اس نے اپنے بچے کو ٹوکری میں پایا، پہلے تو وہ ہکچکائی، اور پھر آگے بڑھ کر اس ٹوکری کو کھولا، جس سے بچہ نکل آیا۔

محکمہ جنگلی حیات کی جانب سے جاری ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ بچے سے پھر ملنے پر تیندوا ماں کس طرح بے قرار ہو کر اسے چاٹنے لگی ہے، اور پھر تیزی کے ساتھ وہاں سے دونوں چلے گئے۔ محکمے کے اہل کاروں کا کہنا تھا کہ انسانوں کی سرگرمی کی وجہ سے جانور اپنی رہایش گاہوں سے بے گھر ہوتے ہیں، ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ مقامی کسان تیندوے کے بچے کی موجودگی سے ڈر گئے تھے اور انھوں نے مطالبہ کیا تھا کہ اسے گاؤں سے دور لے جایا جائے۔

اس ویڈیو کو سوشل میڈیا پر بہت لوگوں نے پسند کیا اور اس سے انسانوں اور جانوروں کے آپسی تنازعے کی ایک بحث بھی چھڑ گئی۔ خیال رہے کہ کئی ممالک میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے لاک ڈاؤن لگایا جا چکا ہے جس کی وجہ سے سوشل میڈیا پر جانوروں کی انسانی آبادیوں میں نکلنے کی متعدد ویڈیوز سامنے آ رہی ہیں، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ جانور سیاحوں کی غیر موجودگی کا لطف اٹھانے لگے ہیں۔