مانچسٹر برطانیہ سے یاسر اختر کی نصرت حارث سے آن لائن گفتگو صرف جیوے پاکستان پر

یاسر اختر پاکستان کے مشہور اور خوبصورت اداکار گلوکار رائٹر۔ پروڈیوسر ہیں کچھ عرصے سے وہ برطانیہ میں مقیم ہے آجکل وہ کن پروجیکٹس پر کام کر رہے ہیں اور لاک ڈاؤن کے دوران وقت کیسے گزارا ہے اس حوالے سے انہوں نے برطانیہ کے شہر مانچسٹر سے کراچی میں موجود نصرت حارث سے آن لائن گفتگو کی ہے جسے جیوے پاکستان ڈاٹ کام کے قارئین کے لیے یہاں پر پیش کیا جا رہا ہے ۔

یاسر اختر نے سب سے پہلے دنیا بھرکے مسلمانوں کو رمضان المبارک کی مبارکباد پیش کی اور انھوں نے بتایا کہ شام کو پانچ سے سات بجے تک میں وہ کرتا ہوں مانچسٹر کے علاقے وائٹ فیلڈ میں رہتا ہوں یہ خوبصورت اور پرسکون علاقہ ہے یہاں زیادہ تر یہودیوں کی آبادی ہے سال 2004 میں میں فیملی کے ساتھ یہاں آگیا تھا ۔

کرونا کے دنوں میں سب کچھ متاثر ہوا ہے اور اس کے اثرات زندگی کے سب شعبوں اور لوگوں پر پڑے ہیں لیکن میں نے اپنا اور اپنے کام کا کافی خیال رکھا ہے اور خود کو مصروف رکھا ہے ۔
نئے پروجیکٹ فلم آزاد کے حوالے سے سوال پر انہوں نے بتایا کہ دراصل فلم آزاد 12 فلموں کی ایک سیریز کا پروجیکٹ ہے اس کی دو فلمیں ہم شوٹ کر چکے ہیں ایک فلم میں معمر شیخ پروین اکبر یاسر اختر برطانوی آرٹسٹ اور کچھ نئے لوگ لیے گئے ہیں دوسری فلم میں نمرہ خان ہیں اور یہ فلمیں ملٹی نیشنل فلمیں ہیں نوے منٹ کی اسٹوریاں ہیں انہیں ہم پاکستان برطانیہ یواے وغیرہ میں شرکت کر رہے ہیں کامیاب پاکستانیوں کو اجاگر کر رہے ہیں ۔


نصرت حارث نے یاسر اختر سے پوچھا کہ کیا آپ کی نئی فلموں کے لیے پاکستان سے لوگ آپ کو آڈیشن دے سکتے ہیں یہاں بڑا پوٹینشل ہے لوگ اچھے اچھے کام کر رہے ہیں کیا آپ انہیں ساتھ لینا چاہیں گے ؟
یاسر اختر نے کہا بالکل ہمیں خوشی ہوگی میرے سوشل میڈیا پہ جس پر لوگ رابطہ کر سکتے ہیں اپنے حوالے سے تفصیلات بھیج سکتے ہیں ہم انہیں دیکھ لیں گے ۔

لاک ڈاؤن پریشر کے حوالے سے ایک سوال پر یاسر اختر نے بتایا کہ ہم آرٹسٹ لوگ ہیں ہمارے پروجیکٹس میں غیب آتا رہتا ہے اس دوران ہم ذہن سازی کر رہے ہوتے ہیں نئے پروجیکٹس نئے آئیڈیاز کے بارے میں سوچتے ہیں میری چھوٹی سی دنیا ہے میں اپنے آپ میں مگن رہتا ہوں شروع شروع میں بےچینی ہوئی جب نیوز چینلز دیکھ رہا تھا پھر میں نے نیوز چینلز دیکھنا چھوڑ دیے اپنے کام پر زیادہ توجہ مرکوز کر لی ہے یہاں مختلف اسٹوڈیوز ہی میرا ہوم اسٹوڈیو بھی ہے آجکل تیسری فلم کی پلاننگ کر رہا ہوں ٹائم نہیں ملتا اچھی بات یہ ہے کہ سب کچھ آن لائن ہو چکا ہے آسانی ہوجاتی ہے اگلی مرتبہ آپ کو اپنے سٹوڈیو بھی دکھاؤں گا اور عید کے بعد آپ کو ہمارا کام بھی نظر آئے گا ۔
اس سوال پر کہ لوگ آپ کو ڈراموں میں دیکھنا چاہتے ہیں آپ کے فین ہیں ان کے لیے کیا بنا رہے ہیں یاسر اختر نے بتایا کہ میں کوشش کرتا ہوں کہ نئے پروجیکٹ کرتا رہوں برطانیہ میں آکر بھی میں بہت مصروف رہا ہوں اچھا کام چل رہا ہے سہارا بینک اور دیگر کمپنیوں کے اشتہارات بھی یہ ہی لندن ترکی میں میوزک ویڈیوز بھی کیے ہیں اس حوالے سے خوش قسمت آرٹسٹ ہو کہ بی بی سی میوزک پر بھی ہو ں۔ آخر میں انہوں نے نصرت حارث کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ میں دنیا میں کہیں بھی چلا جاؤں پاکستان اور اپنے فینز اور آپ جیسے پیارے لوگوں کو نہیں بھولتا ۔سب پاکستانیوں کی محبت کا بہت شکریہ اپنا بہت خیال رکھیں ۔